May 17, 2012

NO DISCUSSION ON RELIGIONS HERE.
Click here to post religious topics.

Share and discuss the latest Pakistani Political News and Views here. Feel free to include links to interesting videos, news, and articles from electronic media, newspapers or blogs. Always pretext a link with some explanation about the content of a link.

172 Comments

  1. Javed Ikram Sheikh says:

    Let’s understand, tolerate and digest the TRUTH.
    1. No Civil and Military Government in Pakistan can afford to ignore American Advice.
    2. Drone Attacks would continue until—safe heavens of Terrorists exist in Pakistan.
    3. Section of Pakistan Media, selling their time to promote Emotionalism, would be frustrated.
    4.Time and energy should not be wasted for Khilafat as that is never possible to be established in Pakistan.
    5. People of Pakistan must be Educated about the Ground Realities of 21st Century.
    6. Pakistan could be a Worth living Welfare State as early as pre-requisites of moderation are acknowledged.

  2. Shirazi says:

    @Bawa Ji

    فوجیوں کی تو بات ہی چھوڑیں کیونکہ آئین توڑنا اور اپنا ہی ملک فتح کرنا انکا پیشہ ہے لیکن انکا کیا کریں جنھیں ہم اپنے ووٹ دے کر اپنی نمائیندگی کے لیے منتخب کرتے ہیں اور جو دن رات پارلیمنٹ کی بالا دستی کے ترانے گاتے ہیں لیکن پس پردہ فوجیوں کے بوٹ چوم رہے ہوتے ہیں

    ~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~
    You seem to be inspired by Ansar Abbasi school of reformists, write one sentence military and then 5 paragraphs on Politicians. When Politicians fail it’s our failure too. Politicians draw their power from ma$ses but when m@sses are contend with Generals, as is in most muslim world, politicians are forced to make back ground deals with Generals. I have no problem you abusing Politicians as long as you understand that they are weak because we make them weak. We , the people, deserve 50% if not more of the compliments that you shower on them.

    If masses had stood by NS he didn’t need to sign 10 year no politics pact or BB didn’t have to sign infamous NRO. When you point one finger to them please do not ignore in your direction.

  3. Shirazi says:

    @Bawa Ji

    فوجیوں کی تو بات ہی چھوڑیں کیونکہ آئین توڑنا اور اپنا ہی ملک فتح کرنا انکا پیشہ ہے لیکن انکا کیا کریں جنھیں ہم اپنے ووٹ دے کر اپنی نمائیندگی کے لیے منتخب کرتے ہیں اور جو دن رات پارلیمنٹ کی بالا دستی کے ترانے گاتے ہیں لیکن پس پردہ فوجیوں کے بوٹ چوم رہے ہوتے ہیں

    ~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~
    You seem to be inspired by Ansar Abbasi school of reformists, write one sentence military and then 5 paragraphs on Politicians. When Politicians fail it’s our failure too. Politicians draw their power from ma$ses but when m@sses are contend with Generals, as is in most muslim world, politicians are forced to make back ground deals with Generals. I have no problem you abusing Politicians as long as you understand that they are weak because we make them weak. We the people deserve 50% if not more of the compliments that you shower on them.

    If ma$ses had stood by NS he didn’t need to sign 10 year no politics pact or BB didn’t have to sign infamous NRO. When you point one finger to them please do not ignore remaining four in your direction.

  4. بلیک شِیپ says:

    I have no problem you abusing Politicians as long as you understand that they are weak because we make them weak.

    میں نے بھی یہ اہم نکتہ کئی دفعہ ہمارے ایزی گو صاحب کو سمجھانے کی کوشش کی لیکن ناکامی کے بعد یہ سوچا کہ وقت سے بہتر کون سِکھا سکتا ہے۔۔۔۔۔۔
    :-( 😉 :-(

  5. Bawa says:

    یہ بھی کمال کی منطق ہے کہ ہم اپنے سیاستدانوں کو کمزور کرتے ہیں

    کیسے؟ اپنا ووٹ دے کر، حکومت کے ایوانوں تک پہنچا کر، پارلیمنٹ کے ممبر بنوا کر، بار بار ان پر اعتماد کا اظہار کرکے اور پھر ان سے اپنی کھال اتروا کر

    ایسی منافقت اور بے ہودگی پجاریوں سے متوقع ہوتی ہے کیونکہ حقیقت تسلیم کرنے کی ان میں جرات ہی نہیں ہوتی

    آئیے میں بتاتا ہوں کہ سیاستداں کمزور کیوں ہوتے ہیں

    سیاستدان اپنے کالے کرتوتوں کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، جرنیلوں کو ڈیڈی بنانے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، ووٹ لیکر حکومت میں پہنچنے کے بعد عوام سے کٹ جانے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، اپنی انتخابی شکست تسلیم کرنے کی بجائے آمروں سے سازباز کرکے اقتدار اکثریتی پارٹی کو منتقل ہونے سے روکنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، میرٹ کی بجائے اپنے پسندیدہ جرنیلوں کو آرمی چیف بنانے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، جمہوریت پر یقین نہ رکھنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، اپنی پارٹیوں میں کارکنوں کی بجائے راشہ داروں اور مداح سرائی کرنے والوں کو نوازنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، سیاسی پارٹیوں کو باپ کی جاگیر بنانے اور ولی عہد نامزد کرنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، عوامی مفاد کی بجائے اپنے اور اپنے آقاؤں کے مفادات کا تحفظ کرنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، اپنی لوٹ مار کو تحفظ دینے کی خاطر جرنیلوں سے سمجھوتے کرنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، جرنیلوں کے پیچھے دم ہلا ہلا کر چلنے سے کمزور ہوتے ہیں، اقتدار بچانے کی خاطر جرنیلوں کو تمغہ جمہوریت دینے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، آئیں توڑنے والے جرنیلوں کو گارڈ آف آنرز دیکر رخصت کرنے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، اقتدار کی ہڈی کی خاطر اپنے کپڑے تک اتار کر فوجیوں کے سپرد کر دینے سے کمزور ہوتے ہیں، اپنا منہ کالا ہونے سے بچانے کے لیے عدلیہ کے احکامات ماننے سے انکار کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں اور سزا پا کر بھی اقتدار سے چمٹے رہنے سے کمزور ہوتے ہیں

    اگر سیاستدان اپنے کرتوت ٹھیک کر لیں، اپنی سوچ بدل لیں، اپنے ماضی سے توبہ تائب ہو جائیں اور ملکی و غیر ملکی آقاوں کی طاقت کی بجائے عوامی طاقت پر بھروسہ کریں تو کسی جرنیل کی جرات نہیں کہ انکی طرف آنکھ اٹھا کر دیکھ سکے اور انہیں ڈکٹیٹ کروا سکے. ترکی کی مثال سامنے ہے کہ جب سیاستدان بے داغ ہوتے ہیں اور عوامی طاقت پر بھروسہ کرتے ہیں تو وہ نہ صرف جرنیلوں کو ناکوں چنے چبوا دیتے ہیں بلکہ انہیں الٹا بھی لٹکا دیتے ہیں لیکن جب سیستدان اقتدار کے بھوکے اور داغدار ہوتے ہیں تو پھر اسی طرح دم ہلاتے ہلاتے جرنیلوں کے پیچھے پیچھے چلتے ہیں، اسی طرح این آر او کرتے ہیں اور گارڈ آف آنرز دیکر عزت و احترام سے رخصت کرتے ہیں

  6. anyname says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    Let’s understand, tolerate and digest the TRUTH.
    1. No Civil and Military Government in Pakistan can afford to ignore American Advice.
    2. Drone Attacks would continue until—safe heavens of Terrorists exist in Pakistan.
    3. Section of Pakistan Media, selling their time to promote Emotionalism, would be frustrated.
    4.Time and energy should not be wasted for Khilafat as that is never possible to be established in Pakistan.
    5. People of Pakistan must be Educated about the Ground Realities of 21st Century.
    6. Pakistan could be a Worth living Welfare State as early as pre-requisites of moderation are acknowledged.

    Mr. Sheikh

    I have advised you before, you by your own admission are non-Pakistani and therefore should stop volunteering your (what Pakistan or Pakistanis should nor should not do) to yourself. Keep your nose out of Pakistan’s affairs until and until someone seeks your advice. I hope that is clear to you.

  7. پیارا دن says:

    عوام ان سیاستدانوں کو کمزور کرتے ہیں ؟؟؟ہیں جی یہ کس بھوت فلاسفر نے ہانکا ہے ؟؟؟

    جن عوام کے خون سے یہ جمہوریت کے ایوانوں میں براجمان ہوتے ہیں ان کے لئے تو کچھ نہیں کرتے اور توقع ان کویہ کہ ہر صورت ان کی ریا کاریاں برداشت کی جائیں اور اف تک نہ کی جائے …. کیا عوام مٹی کے مادھو ہیں جن کی کوئی امنگ اور آرزو نہیں …کیا یہ ایوانوں میں دلکش ملبوسات پہننے اور کالے انگریز بن کر جھوٹی انگریزی بولنے کے لئے عوام کے جمہوری قیادت حاصل کرتے ہیں — او ہو شائد کچھ زیادہ ہی جذباتی پنا ہوگیا…غلطی ہو گئی جو ان الیاس بوبیوں کی شلوار نیچے کھسکا دی اور وقت کا انتظار نہیں کیا جو خود ہی عوام کے تمام زخم مندمل کر دیتا —

  8. زالان says:

    تمام غیرت مند ٹی وی اینکرز نے اپنی پچاس لانکہ ماہانہ تنخوا غریبوں میں دینے کا اعلان کر دیا -میڈیا سیاسی اتحاد

  9. پاکستانی سیاستدان says:

    @پیارا دن

    بھائی جی آپ سے شاید ایک اور غلطی ہوگئی آپ شاید الماس بوبی لکھنا چاہ رہے تھے اور الیاس بوبی لکھہ دیا۔

    ویسے ہمارے سیاستدان الماس بوبیوں سے بھی بدتر ہیں، انہیں الماس بوبیوں سے ملانا الماس بوبیوں کی توہین ہے۔ الماس بوبی جیسے لوگ کرپٹ نہیں، چور نہیں، لٹیرے نہیں، سوئس بینک میں اکاؤنٹ بھرنے والے نہیں، این آر او کرنے والے نہیں، سرے محل بنانے والے، جرنیلوں سے ڈیل کرکے دس سال کے لئے ملک چھوڑ کر بھاگنے والے نہیں، بھتہ لینے والے نہیں، ٹارگٹ کلنگ کرنے والے نہیں، ملک کو مہنگائی، بیروزگاری، بدامنی، دہشتگردی کے تحفے دینے والے نہیں، برطانیہ کا پاسپورٹ لے کر وہاں سے بیٹھہ کر مافیا چلانے والے نہیں، اسلام کا نام استعمال کرکے سیاست کرنے والے نہیں، ملک میں لوڈشیڈنگ کا بحران پیدا کرنے والے نہیں، جرنیلوں کے بوٹ پالش کر کے سونامی اور انقلابی ہونے کا دعویٰ کرنے والے نہیں، پیلی ٹیکسی، لیپ ٹاپ، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام جیسی سستی شہرت اور ووٹ خریدنے والی اسکیمیں چلانے والے نہیں۔

    لکھہ دی لعنت ان سو کالڈ عوامی سیاستدانوں دے بھوتے دے اتے

  10. Shirazi says:

    @Bawa Ji

    سیاستدان اپنے کالے کرتوتوں کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں، جرنیلوں کو ڈیڈی بنانے کی وجہ سے کمزور ہوتے ہیں،
    ~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~~
    Your repeated charge sheet is an effect. What is the cause of this effect? The Public.

    If Politicians know public will stand by them through thick and thin they won’t be forced to appease GHQ and Washington. When they know despite all ills few anti-American and anti-Indian rhetorics will switch loyalties of whole nation towards GHQ in matter of days they are forced to make back ground deals. When Bhutto was hanged or Nawaz Sharif was exiled what was Public reaction – next to nothing. Something that Generals easily managed. If this is how we stand by our most popular leaders what right do we have to point fingers?

    Your other charge corruption, favoritism, bickering etc etc … they do that because they can get away with that. How many times you have voted against PML? I bet ZERO despite all this charge sheet. When we start following political parties like religion – all emotions no rationals; we need to focus on four fingers pointing inwards that one pointing outward.

  11. Javed Ikram Sheikh says:

    @ anyname Sahib
    1. You have no right to monopolize an International Opinion Forum just for the promotion of One Way Traffic.

    2. You have no right to object about the Freedom of Expression.

    3. You have no moral, ethical, cultural, social or administrative right to block the flow of opinion.

    4. Only a Moderator at the Forum is privileged—to—-Edit—Delete—Modify—or—block—-any objectionable—–out of sync—–bogus—–unethical—–stupid—–
    —-But—— I must —-acknowledge—-Your Right—-to——
    Discuss—- debate—-differ—–demonstrate—–
    Your deliberations—-through sound Arguments.
    The word Pakistan was coined by Ch Rahmat Ali when he was living in the UK. Did you ever objected —why a person —not living —in India—-poked his nose —-into Indian Affairs?
    Best would be ——let the show go on——-smoothly—-lively—-pleasantly—-intellectually.
    Let the —–young generation of Bloggers—-go—-Grow—-and —-Glow.
    With best wishes.

  12. Javed Ikram Sheikh says:

    Pakistani born, living abroad, as citizens, immigrants or having dual nationality—–
    —or—-tired of Pakistan’s social, cultural and political—journalistic —buk —buk—–
    still——-
    contribute more than $ 30 Billions—-yearly—–to the economy of Pakistan.

    This amount is more than the Annual Budget of Pakistan.

    And——one —celebrated —intellectual—individual———is advising them —-to stay —away–from —the sinking —-Titanic.

  13. saleem raza says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    Pakistani born, living abroad, as citizens, immigrants or having dual nationality—–
    —or—-tired of Pakistan’s social, cultural and political—journalistic —buk —buk—–
    still——-
    ——–
    محترم جاوید شیخ صاحب
    جب اپ نے چمن سے اشیانہ ہی اُٹھا لیا ، تو اپ کی بلاِ سے وہاں ہما بسے یا بوم رہے
    اور کیا وہ کمال کا ایک شعر تھا
    کہ تو بسمل نہیں ہے تو تمنا بھی چھوڑ دے-
    مانا کہ ہمارے حالات اور خیالات اچھے نہیں ہے یہ دنیا ظلمت کدہ سہی –
    لیکن کیا اچھا نہیں کہ ہم ماضی کے دھندلے خاکوں میں چیختے چنگھاڑتے رنگ بھرنے
    کے بجاے حال کو روشن کرنا سیکھیں-

  14. saleem raza says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    @ anyname Sahib
    1. You have no right to monopolize an International Opinion Forum just for the promotion of One Way Traffic.
    —-
    اینی نیم سر اپ سے گزارش ہے اپ جاوید صاحب کو کسی بات پر نہ روکیں کیونکہ عمر کہ اس حصے جہاں انسان کووقت گزرنے کا احساس نہیں ہوتا لیکن وقت اپنے نقوش انسان
    کے چہرے پر چھوڑ دیتا ہے –
    اپ جاتی بہار کے گناہ گار کیوں بننا چاہتے ہیں –

  15. saleem raza says:

    I have no problem you abusing Politicians as long as you understand that they are weak because we make them weak.
    ——–
    شرازی جی لگتا ہے اپکی کوفی میں کسی بدچلن نے پانی ملا دیا ہے –
    اس طرح کی بِل بوتوری مارنے سے پہلے ادھر اُدھر دیکھ لیا کریں کہ کوئی دیکھ تو نہیں رہا-
    :)

  16. saleem raza says:

    پاکستانی سیاستدان said:
    @پیارا دن

    بھائی جی آپ سے شاید ایک اور غلطی ہوگئی آپ شاید الماس بوبی لکھنا چاہ رہے تھے اور الیاس بوبی لکھہ دیا۔

    ویسے ہمارے سیاستدان الماس بوبیوں سے بھی بدتر ہیں، انہیں الماس بوبیوں سے ملانا الماس بوبیوں کی توہین ہے۔ الماس بوبی جیسے لوگ کرپٹ نہیں، چور نہیں، لٹیرے نہیں، سوئس بینک میں اکاؤنٹ بھرنے والے نہیں، این آر او کرنے والے نہیں، سرے محل بنانے والے، جرنیلوں سے ڈیل کرکے دس سال کے لئے ملک چھوڑ کر بھاگنے والے نہیں، بھتہ لینے والے نہیں، ٹارگٹ کلنگ کرنے والے نہیں، ملک کو مہنگائی، بیروزگاری، بدامنی، دہشتگردی کے تحفے دینے والے نہیں، برطانیہ کا پاسپورٹ لے کر وہاں سے بیٹھہ کر مافیا چلانے والے نہیں، اسلام کا نام استعمال کرکے سیاست کرنے والے نہیں، ملک میں لوڈشیڈنگ کا بحران پیدا کرنے والے نہیں، جرنیلوں کے بوٹ پالش کر کے سونامی اور انقلابی ہونے کا دعویٰ کرنے والے نہیں، پیلی ٹیکسی، لیپ ٹاپ، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام جیسی سستی شہرت اور ووٹ خریدنے والی اسکیمیں چلانے والے نہیں۔

    لکھہ دی لعنت ان سو کالڈ عوامی سیاستدانوں دے بھوتے دے اتے
    ———-

    پاکستانی سیاستدان پائی جگرَ الماس بوبی کی اتنی حمایت اللہ خیر کرے ۔
    :) 😀

  17. anyname says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    Pakistani born, living abroad, as citizens, immigrants or having dual nationality—–
    —or—-tired of Pakistan’s social, cultural and political—journalistic —buk —buk—–
    still——-
    contribute more than $ 30 Billions—-yearly—–to the economy of Pakistan.

    Mr. Sheikh

    The operative word is Pakistani and yes overseas Pakistanis make a tremendous financial contribution to Pakistan. We the Pakistnis are very much aware of this and do not need a non-Pakistani to remind us. And thank you for recognising that I have a right more than non-Pakistanis to defend my country against any non-sensical remark by a foreigner and I will continue to do so. AND

    @saleem raza sahib
    With due respect I cannot oblige becasue:

    Sharm oos ko magar naheen aati.

  18. Shirazi says:

    @Saleem Raza Saab

    Politicians derive power from ma$ses who vote them to power. If they are weak it reflects our weakness too. You don’t need strong coffee to understand this common sense.

    :)

  19. saleem raza says:

    اینی نیم سر
    میں اپ سے ہاتھ جوڑ کر گزارش کرتا ہوں- کہ ادمی ایک دفعہ پروفیسر ہوجاے
    تو عمر بھر پروفیسر ہی کہلاتا ہے ، خواہ بعد میں سمجھ داری کی باتیں ہی کیوں نہ کرنے لگے – اس لیے اُن کی جان اور اپنی ڈانگ کا خیال کریں-

  20. saleem raza says:

    Zia M said:
    Politicians too are the members of our society, they are not being imported from another country.
    We should not expect healthy fruit from a rotten tree.
    —-
    جناب جب تک اپ اپنی پوسٹ میں وہ چند الفاظ نہیں لکھتے — جن کی وجہ سے اپکو ، چونگی،پر روک لیا جاتا ہے – معزرت کے ساتھ اپکی بات میں وزن نہیں ہوتا –

    :)

  21. Zia M says:

    “The operative word is Pakistani and yes overseas Pakistanis make a tremendous financial contribution to Pakistan. We the Pakistnis are very much aware of this and do not need a non-Pakistani to remind us”
    —————-
    Wonderful!
    We aren’t done deciding who is a Muslim and non-Muslim, now we are going to decide who is a Pakistani.
    It is reminiscent of when Baghdad was under attack the Mullahs were debating whether Tota is Halal or Haram.

  22. saleem raza says:

    Shirazi said:
    @Saleem Raza Saab

    Politicians derive power from ma$ses who vote them to power. If they are weak it reflects our weakness too. You don’t need strong coffee to understand this common sense.
    —–
    مھجے تو لگتا ہے کوفی پی پی کر اپ بھی پروفیسر بنتے جا رہے ہیں-
    اور چلتے چلتے ایک بات بتا دوُں سیاست دان کو عوام کمزور نہیں کرتی ساستدان
    اپنے لالچ پیسے کی ہوس اقتدار کی خاطر کمزور ہوتا ہے،
    اپ کوفی پی کر ہی کمنٹ لکھا کریں کیونکہ اب کوفی نہ پینا اپ کے لیے خطرناک ہو سکتا ہے-
    پلٹ کر پھر جھپٹتے ہیں

  23. Zia M says:

    جناب جب تک اپ اپنی پوسٹ میں وہ چند الفاظ نہیں لکھتے — جن کی وجہ سے اپکو ، چونگی،پر روک لیا جاتا ہے – معزرت کے ساتھ اپکی بات میں وزن نہیں ہوت
    —————
    Hazoor, you may be right.
    Let me put it this way.
    In a society predominantly of jack@sses, the “chungi” should not be so allergic to the word “@ss”
    :)

  24. Shirazi says:

    @Saleem Raza Saab

    If politician is greedy, corrupt and whatever adjective you want to throw public gets an opportunity to throw him out. If they don’t they need to share the blame. Remember Politicians derive power from ma$ses. If people don’t vote for him he would just be an ordinary man.

  25. EasyGo says:

    بلیک شِیپ said:
    I have no problem you abusing Politicians as long as you understand that they are weak because we make them weak.

    میں نے بھی یہ اہم نکتہ کئی دفعہ ہمارے ایزی گو صاحب کو سمجھانے کی کوشش کی لیکن ناکامی کے بعد یہ سوچا کہ وقت سے بہتر کون سِکھا سکتا ہے۔۔۔۔۔۔

    =========

    بلیک شیپ صاحب

    اب ایسی بھی بات نہیں ہے، آپ سب سے بہت کچھ سیکھا ہے اورسیکھ رہا ہوں
    اور وقت کے سب کیلیے بہترین استاد ہونے پر آپکی بات سے مکمل اتفاق ہے

    ایسا نہیں ہے کہ مجھے پاکستانی عوام کی کمیوں کو ڈیفنڈ کرنے کا شوق ہے
    لیکن مجھے سارا بوجہ اور نزلہ عوام پر گرا دینا بھی ایسے ہی لگتا ہے
    کہ جیسے حکمرانوں کو بری حکمرانی کے باوجود فرار کا راستہ فراہم کرنا
    جسکی جب اورجتنی ذمہ داری بنتی ہے اسکو اتنا ہی الزام بھی دینا چاہیے

    عوام کو فوج بھی اپنے پیچھے لگا لیتی ہے، اور وقت پڑنے پر سیاستداں بھی الجھا لیتے ہیں
    اور عوام سے یہ امید کہ وہ ارتقائی عمل کے ذریے خود بخود ٹھیک ہو جایے گی، مجھے اپنے آپ کو تسلی دینے والی بات لگتی ہے

    شیرازی صاحب کہتے ہے کہ عوام کے پاس اختیار ہے کہ وہ جس کو غلط سمجھتے ہیں ووٹ کے ذریے آوٹ کردیں
    ایسا ہے تو کم از کم سیاسی پارٹیاں منصفانہ الیکشن کروانے کے لئے ہی کوشش کرتی نظر آئیں

  26. Javed Ikram Sheikh says:

    ‘ Defending Pakistan’

    by promoting——- Terrorism—Hatred—Personal Bashing—-Intolerance about——- difference of Opinion——-
    Doesn’t make sense.

    A wise enemy—-is —-much better —than a —Foolish Friend.

    Osama Bin Laden —-also—-boasted of —-to be —a defender of —-Muslim Ummah.

  27. saleem raza says:

    شرازی جی
    لگتا اپ بھی چھوٹے ہی پیدا ہوے تھے لیکن اب اپ کاکے نہیں رہے کہ کوفی
    کا مطلب نہ سمجھ سکیں ،
    خیر میں اس کوفی کو پی کر اپنا رنگ اور کالا نہیں کرنا چاہتا پہلے ہی ستیاناس ہوا پڑا ہے-
    شکریہ نوازش

  28. Shirazi says:

    @EasyGo Saab

    All I said we can’t pass the blame to ruling class – civil or military; we the people need to share the blame for chaos. Of course it will never be perfected. This journey of perfecting the union will keep on.

    If you have a short cut, pls share.

    :)

  29. saleem raza says:

    لڑکے وعلیکم السلام
    اس طرح کے گانے مت سنو ورنہ نوجوانی سے پھدک کر بڑھپے میں
    پہنچ جاو گے – پھر جوان اپکو بڈھا اور بڈھے اپکو لونڈا سمجھ کر منھ نہیں لگاہیں گے

  30. EasyGo says:

    ہا ہا ہا ہا
    جی سلیم رضا صاحب
    آپ کے سمجھانے پر میں قربان
    ٹھیک ہے، میں بعد میں کوئی ڈسکو سن کر بیلنس کر لونگا
    :) :)

  31. Bawa says:

    Shirazi
    When Bhutto was hanged or Nawaz Sharif was exiled what was Public reaction – next to nothing.

    شیرازی جی

    اسے نذیر ناجی کی سے “معصومیت” سمجھوں یا حالات و واقعات سے لا علمی یا پھر ایک پجاری کی اپنے گرو سے اندھی عقیدت؟؟؟؟؟؟

    کیا دھونس دھاندلی کے ذریعے اقتدار کی ہڈی منہ میں دبائے رکھنے، پورے ملک میں دھاندلیوں کے خلاف اعتجاجی تحریک کے باوجود دوباہ الیکشن کروانے سے انکار، اپنے ہی چھے سو لوگوں کو گولیوں سے بھون دینے اور ان پر ٹینک چڑھانے کے احکامات صادر کرنے اور ملک کے بڑے بڑے شہروں میں اعتجاجی تحریک کو کچلنے کی خاطر مارشل لا لگانے لگانے کے بعد بھی کوئی اس قابل رہتا ہے کہ لوگ اسکی خاطر سڑکوں پر نکلیں اور لاٹھیاں اور گولیاں کھائیں؟

    آخر پجاریوں اور نائیوں نے عوام کو بھیڑ بکریاں کیوں سمجھ رکھا ہے؟

    جو عوام سے کٹ جاتے ہیں انکا یہی انجام ہوتا ہے

  32. Bawa says:

    I don’t visit that site anymore after my termination from the Discuss Forum by Mr. SE Mirza.

    یہ غیرتمندی صرف ڈسکشن فورم تک ہی کیوں محدود رکھی گئی ہے؟

    یہ احسان ڈسکشن فورم والوں پر ہی کیوں کیا گیا ہے؟ ہماری خطا کیا ہے اور ہمیں کیوں اس سعادت ہے محروم رکھا گیا ہے؟

    کیا یہ نظر کرم ہم پر بھی ہو سکتی ہے؟

    ———

    بتا میری کونسی خطا ہے؟
    کہ جس کی اتنی بڑی “سزا” ہے؟

    😉 😉 😉
    😀 😀 😀
    :mrgreen: :mrgreen: :mrgreen:

  33. Bawa says:

    بے غیرتی میں ہے کوئی ہم سا؟ – ہم سا ہو تو سامنے آئے

    😉 😉 😉

    😀 😀 😀

    [img]http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/17-05-2012/updates/5-17-2012_107027_1.gif[/img]

  34. Pak1stan1 says:

    How can these corrupt stooges stand up against Nato supplies:

    [img]http://1-ps.googleusercontent.com/x/www.friendskorner.com/1.bp.blogspot.com/-_kEr0OBqwVg/Tjl-XynAHbI/AAAAAAAAJIk/_OK_4XYlW6g/s320/xshahbaz_sharif_Cutting_Cake_US_4th_July.jpg.pagespeed.ic.-vLcR3zKl8.jpg[/img]

  35. بلیک شِیپ says:

    ایزی گو صاحب۔۔۔۔۔۔
    آپ اور یہاں موجود آپ کے جیسی ہی سوچ کے حامل دوسرے لوگوں کے ساتھ ایک بہت بڑا مسئلہ یہ ہے کہ آپ لوگ فرشتوں کو حکومت کرتے دیکھنا چاہتے ہیں۔۔۔۔۔۔ لیکن اس بہت بڑے مسئلہ کے ساتھ ایک چھوٹا سا مسئلہ یہ ہے کہ انسانی تاریخ میں فرشتوں کی حکومت کبھی بھی نہیں رہی۔۔۔۔۔۔ افسوس صد افسوس۔۔۔۔۔۔ انسانوں نے ہی انسانوں پر حکومت کی ہے یا انسانوں نے انسانوں ہی اپنے اوپر حکومت کرنے کیلئے چنا ہے۔۔۔۔۔۔
    ویسے جہاں تک پاکستان کی بات ہے تو میرا تو اس پر بہت حد تک یقین ہے کہ ہم پر اللہ کے برگزیدہ خاکی بندوں اور آبپاری خفیہ فرشتوں نے ہی حکومت کی ہے۔۔۔۔۔۔

    دراصل جو ہمارے آئیڈیل سوچ رکھنے والے حضرات ہوتے ہیں ان کی تمام عمر حقیقی دنیا میں فرشتوں کا انتطار کرتی گذرتی ہے۔۔۔۔۔۔ کچھ نے تو مذہبی کتابوں سے جھوٹی سچی کہانیاں حفظ کرلی ہیں کہ فرات کے کنارے کتا بھی مرے گا تو اس کی ذمہ داری خلیفہ پر ہے چاہے ہاتھ میں کوڑا لیکر موقعِ واردات پر خود ہی جج، استغاثہ، گواہ اور پھر جلاد کا فریضہ بھی یہی خلیفہ دوئم انجام دیتا تھا۔۔۔۔۔۔ لہٰذا اب وہ خلیفہ کے انتظار میں نہ صرف گھڑیاں گن گن کر بلکہ کیانی کو آنکھیں مار مار کر گذار رہے ہیں لیکن برا ہو کیانی کا کہ وہ خلیفہ دوئم کو ہی اپنا رول ماڈل سمجھتا ہے لہٰذا خود ہی ساری ٹوپیاں پہننے پر یقین رکھتا ہے۔۔۔۔۔۔ ہائے رے خلافت۔۔۔۔۔۔

    اب آپ کا کہنا یہ ہے کہ فوجیوں نے بھی عوام کو ٹرک کی بتی کے پیچھے لگا لیا اور سیاستدانوں نے بھی یہی کیا تو بھائی میرے اب تو فرشتے ہی بچتے ہیں، لیکن سُنا ہے کہ وہ ہر وقت اپنے رَب کی حمد و ثناء میں مصروف رہتے ہیں، یا پھر وہ مشہورِ زمانہ ٹیکنوکریٹس کی حکومت کا بھی بڑا شور ہے۔۔۔۔۔۔ ایک دفعہ ان کو بھی آزما کر دیکھ لیتے ہیں۔۔۔۔۔۔ ویسے بھی محسنِ پاکستان اور لیگی مذہب میں ایٹمی پیغمبر کا درجہ رکھنے والے بابائے ایٹم بم ڈاکٹر عبدالقدیر خان بھی ٹیکنوکریٹس کے حق میں ہیں۔۔۔۔۔۔ اور کیا پتا ٹیکنوکریٹس کی حکومت بابائے تھر کول جنابِ ثمر مبارک مند کیلئے فنڈز جاری کردے۔۔۔۔۔۔

    😉 :-) 😉

  36. بلیک شِیپ says:

    برملا۔۔۔۔۔۔ نصرت جاوید۔۔۔۔۔۔

    [img]http://express.com.pk/images/NP_LHE/20120518/Sub_Images/1101525191-2.gif[/img]

  37. Shirazi says:

    @Bawa Ji

    In your fluency you forgot to mention why ma$$es didn’t come out for Nawaz Sharif or Fatima Jinnah? Your affection for Bhuttos is an open secret. While you are on the subject could you please also highlight what Indian politicians and public is doing that we are not that keeps Generals in barracks?

  38. Javed Ikram Sheikh says:

    “I don’t visit that site anymore after my termination from the Discuss Forum by Mr. SE Mirza.”

    ——-The message must be dispatched to an address—— where—-it works —effectively.
    I have noticed—–at this page—–my messages—are —hitting the —TARGET—–and mostly—–at the —Middle Stump…….

    Now —please —don’t ask me—-about the location —-of the Middle Stump.

  39. Shirazi says:

    @Bawa Ji

    I have voted against PPP yet I am ‘Pujari’ … did u ever vote against PML – A to Z? Do you classify your consistency as pooja or patriotism?

    :)

  40. saleem raza says:

    شیخ جی
    اپ کہیں اور نہ جاہیں کیونکہ یہاں اپکو ہر سہولت موجود ہے اس لیے کہیں اور جانے کی لوڑ نہیں ہے -ہم ہیں نا یہاں اپکی خدمت کرنے کے لیے

  41. Bawa says:

    شیرازی جی

    نواز شریف کی جرنیلوں سے مک مکا کرکے رضا کارانہ جلا وطنی پر عوام کی خاموشی کی وجہ میں نے یہ لکھکر واضح کر دی تھی کہ

    جو عوام سے کٹ جاتے ہیں انکا یہی انجام ہوتا ہے

    جہاں تک فاطمہ جناح کے خلاف ایوب خان کی دھاندلی کا تعلق ہے تو کیا یہ عوام کا در عمل نہیں تھا کہ اس دھاندلی کے بعد ایوب خان تیزی سے عوام میں غیر مقبول ہوا اور آخر عوام نے اسے “کتا” کہہ کہہ کر حکومت سے رخصت کر دیا؟

  42. EasyGo says:

    ٹھیک ہے بلیک شیپ صاحب
    یہ عوام اسی قابل ہیں کہ سو پیاز بھی کھائیں اور سو چھتر بھی
    آئیے سب مل کے حصہ ڈالتے ہیں
    :(

  43. EasyGo says:

    اہم خبر اور اس سے بھی زیادہ اہم اسکا اخباروں میں مین سرخی ہونا

    [img]http://www.express.com.pk/images/NP_LHE/20120518/Sub_Images/1101524980-1.jpg[/img]

  44. Javed Ikram Sheikh says:

    ملا گردی میں نہ مانوں، جب تلک زندہ رھوں
    خانہ دوزخ میں بھی ابلیس سے لڑتا رھوں

  45. atruepakistani says:

    Bawa said:
    جمہوریت کا نام لیتے – شرم تم کو کبھی نہیں آتی
    .
    .

    آئی ایس آئی کا بدنام زمانہ پولیٹیکل سیل 1975 میں قائم ہوا۔ ذوالفقار علی بھٹو نے اس سیل کو قائم کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا
    ———————————————————————————–
    Yes when king Dawood was supporting seperatists of NWFW and want to make Pakhtoonistan ,,,a huge quantity of arms were discovered from IRAQ Embacy in Pakistan. On the other side Communists were active in Blochistan for greater Blochistan.So it was decided to counter these problem.

  46. Javed Ikram Sheikh says:

    ذولفقار علی بھٹو نے ——
    روٹی -کپڑا -مکان —-دیا —-یا—- نہیں دیا
    مشرقی پاکستان توڑا —یا —نہیں توڑا
    اپنے مخالفین کو—مارا—یا— مروایا—یا—-نہیں مروایا
    مسلم ممالک کو اکٹھا کیا —–یا—نہیں کیا
    پاکستان کے لئے—- ایٹم بم بنانے کا —-فیصلہ کیا –یا– نہیں کیا
    پاکستان اور چین —–کی دوستی—کو مضبوط بنایا –یا –نہیں بنایا
    امریکہ سے اختلاف کیا —یا —نہیں کیا
    جمہوریت —–کا نشان تھا —یا —نہیں تھا ——
    لیکن——-یہ —ایک حقیقت ھے—— کہ—-قائد ا عظم کے —بعد —
    ابھی تک اس سے زیادہ—-مقبول سیاسی لیڈر—-پیدا نہیں —هو سکا.
    نواز شریف—-عمران خان—–الطاف— تمام —مذہبی اور سیاسی لیڈر—-
    اپنی سیاسی بقا کے لئے ——-بھٹو —کو —ھی استمعال کرتے ہیں-
    سب کہتے ہیں——ہم ذوالفقار علی بھٹو—- کو —تو سیاستدان مانتے ہیں
    زرداری اور گیلانی کو نہیں مانتے.———
    کسی نے —ضیاء الحق کو —صحیح بتایا تھا—-جناب—مردہ بھٹو —زندہ بھٹو سے بھی
    زیادہ طاقتور هو گا ———آپ کی فکر اور فلسفہ –موت —-
    اور بھٹو کا عکس — آئندہ نسلوں کے لئے——زندگی کی—علامت ——بن جایں گے………

  47. atruepakistani says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    ذولفقار علی بھٹو نے ——
    روٹی -کپڑا -مکان —-دیا —-یا—- نہیں دیا
    مشرقی پاکستان توڑا —یا —نہیں توڑا
    اپنے مخالفین کو—مارا—یا— مروایا—یا—-نہیں مروایا
    مسلم ممالک کو اکٹھا کیا —–یا—نہیں کیا
    پاکستان کے لئے—- ایٹم بم بنانے کا —-فیصلہ کیا –یا– نہیں کیا
    پاکستان اور چین —–کی دوستی—کو مضبوط بنایا –یا –نہیں بنایا
    امریکہ سے اختلاف کیا —یا —نہیں کیا
    جمہوریت —–کا نشان تھا —یا —نہیں تھا ——
    لیکن——-یہ —ایک حقیقت ھے—— کہ—-قائد ا عظم کے —بعد —
    ابھی تک اس سے زیادہ—-مقبول سیاسی لیڈر—-پیدا نہیں —هو سکا.
    نواز شریف—-عمران خان—–الطاف— تمام —مذہبی اور سیاسی لیڈر—-
    اپنی سیاسی بقا کے لئے ——-بھٹو —کو —ھی استمعال کرتے ہیں-
    سب کہتے ہیں——ہم ذوالفقار علی بھٹو—- کو —تو سیاستدان مانتے ہیں
    زرداری اور گیلانی کو نہیں مانتے.———
    کسی نے —ضیاء الحق کو —صحیح بتایا تھا—-جناب—مردہ بھٹو —زندہ بھٹو سے بھی
    زیادہ طاقتور هو گا ———آپ کی فکر اور فلسفہ –موت —-
    اور بھٹو کا عکس — آئندہ نسلوں کے لئے——زندگی کی—علامت ——بن جایں گے………
    ——————————-
    very nice

  48. پاکستانی سیاستدان says:

    http://jang.net/urdu/details.asp?nid=621419

    رحمان ملک کے اڑتالیس گھنٹے اور حکمرانوں کے ستو…کٹہرا … خالد مسعودخان

    دو تین بار غور سے دیکھنے کے بعد وہ بولا صاحب آپ کرتے کیا ہیں؟ میں نے جواب دینے میں ایک دو لمحے توقف کیا تو اس نے دوبارہ کہا۔ صاحب! آپ اخبار میں لکھتے ہیں؟ میں نے کہا ہاں میں اخبار میں لکھتا ہوں۔ وہ کہنے لگا صاحب آپ نے کبھی لیاری کے بارے میں لکھا ہے؟ میں نے انکار میں جواب دیا۔ وہ کہنے لگا صاحب! آپ لیاری کے بارے میں، رحمان ملک کے بارے میں لکھیں۔ میں نے کہا رحمان ملک کے بارے میں تو روز لکھا جاسکتا ہے بلکہ روزانہ لکھ کر ضائع کیا جاسکتا ہے۔ وہ کہنے لگا صاحب! آپ رحمان ملک کے اڑتالیس گھٹنے کے بارے میں لکھیں۔ مجھے اس کی اس بات سے تجسس پیدا ہوا تو میں نے اس سے رحمان ملک کے اڑتالیس گھٹنوں کے بارے میں پوچھا…میں کراچی ایئر پورٹ سے صدر جا رہا تھا۔ ٹیکسی ڈرائیور کا نام خلیل تھا اور وہ لیاری میں رہتا تھا۔ مجھے شک پڑا کہ وہ شاید بلوچ ہے۔ میں نے پوچھا تو وہ کہنے لگا کہ وہ لیاری میں پیدا ہوا ہے اور اس کا والد1947ء میں تقسیم کے وقت ہندوستان سے آ کر لیاری میں آباد ہوا تھا۔ وہ لیاری میں ہونے والی گینگ وار کی تفصیلات بتا رہا تھا۔ وہ پیپلز امن کمیٹی کو لیاری کا سب سے بڑا گینگ بتا رہا تھا۔ اس کے علاوہ بابا لاڈلا، پپو گینگ اور نہ جانے کون کون سے نام بتا کر کہنے لگا کہ سارا معاملہ پیپلز پارٹی نے خراب کیا ہے۔ پھر ذرا توقف سے کہنے لگا پیپلز پارٹی نے بھی نہیں۔ ٹپی صاحب نے معاملہ خراب کیا ہوا ہے۔ میں نے پوچھا یہ ٹپی کون ہے؟ وہ حیرانی سے میری طرف دیکھ کر بولا صاحب! آپ اخبار میں لکھتے ہیں آپ کو ٹپی صاحب کا پتہ نہیں؟ میں نے کہا میں ملتان رہتا ہوں اور کبھی کبھار کراچی آتا ہوں۔ وہ کہنے لگا ٹپی صاحب اپنے آصف علی زرداری صاحب کے سوتیلے بھائی ہیں۔ کراچی میں بس ایم کیو ایم اور ٹپی صاحب کی چلتی ہے۔ باقی سب کیڑے مکوڑے ہیں۔ اور اوپر سے رحمان ملک ہیں ان سے تو اپنا لیاری کا رحمان ڈکیٹ زیادہ معزز آدمی تھا۔ میں نے حیرانی سے پوچھا رحمان ڈکیت معزز آدمی تھا؟ یعنی تمہارے خیال میں وہ رحمان ملک صاحب سے زیادہ عزت دار آدمی تھا؟ وہ کہنے لگا صاحب انسان کی عزت اس کی وزارت یا تعلیم وغیرہ میں نہیں ہوتی اسکے کردار سے ہوتی ہے۔ اس کے قول و فعل سے ہوتی ہے۔ رحمان ڈکیت جھوٹ نہیں بولتا تھا۔ گپیں نہیں ہانکتا تھا۔ غلط وعدے نہیں کرتا تھا۔ دو نمبر اعلانات نہیں کرتا تھا۔ لوگوں کو غلط دلاسے نہیں دیتا تھا۔ ادھر لیاری میں کھڑا ہو کر بڑھکیں نہیں مارتا تھا۔ وہ بے شک ڈکیت تھا مگر زبان کا پکا مرد تھا۔ جو کہتا تھا اس کی زبان پر اعتبار کیا جاسکتا تھا مگر اپنے رحمان ملک صاحب کی تو زبان پر اعتبار کرنا ایک طرف بلکہ وہ جو کہیں اس کے الٹ تصور کریں تو اس میں آپ کا فائدہ ہے۔ وہ تو کھڑے کھڑے بیان جاری کرتے ہیں اور اگلے ہی روز اس کی تردید کردیتے ہیں۔ بلکہ اگلے روز کہاں! وہ تو اپنے ایک ہی بیان میں دو منٹ پہلے کی گئی بات کی تردید کردیتے ہیں۔ اب ان کے اڑتالیس گھنٹوں کو ہی لے لیں۔ میں نے پوچھا یہ تم دوسری بار رحمان ملک کے اڑتالیس گھنٹوں کے بارے میں کہہ رہے ہو مگر تفصیل بتانے کے بجائے تم دوسری باتیں شروع کردیتے ہو۔ وہ کہنے لگا آپ وہ سامنے بجلی کے کھمبوں پر جئے الطاف والے ایم کیو ایم کے جھنڈے دیکھ رہے ہو؟
    میں نے کہا تم مجھے رحمان کے اڑتالیس گھنٹوں کے بارے میں بتا رہے تھے۔ وہ کہنے لگا صاحب! وہی تو بتا رہا ہوں۔ یہ سامنے واپڈا کے سارے کھمبوں پر ایم کیو ایم کے جھنڈے لگے ہوئے ہیں۔ ادھر ریلوے لائن کی دوسری طرف پیپلز پارٹی کے جھنڈے آپ کو نظر آ رہے ہیں۔ آگے جا کر آ پ کو سنی تحریک کے جھنڈے دکھائی دیں گے۔ اصفہانی روڈ پر ایک پارک میں آپ کو جماعت اسلامی کے جھنڈے لگے نظر آئیں گے اور سپر ہائی وے کی طرف نکلیں تو ہر طرف اے این پی کے جھنڈے نظر آئیں گے۔ سارا لیاری پیپلز پارٹی کے جھنڈوں سے بھرا ہوا تھا غرض کراچی میں ہر طرف سیاسی پارٹیوں کے جھنڈے لگے ہوئے ہیں تقریباً ڈیڑھ ماہ پہلے رحمان ملک صاحب نے اڑتالیس گھنٹوں کے اندر کراچی سے تمام سیاسی جماعتوں کو اپنے جھنڈے اتارنے کا نوٹس دیا تھا۔ پھر وہ مجھ سے پوچھنے لگا کہ ڈیڑھ ماہ میں کتنے گھنٹے ہوتے ہیں۔ میں نے موبائل میں موجود کیلکولیٹر سے حساب کرکے بتایا کہ پینتالیس دن میں ایک ہزار اسی گھنٹے ہوتے ہیں۔ وہ ہنسا اور کہنے لگا ایک ہزار اسی گھنٹے گزر چکے ہیں مگر رحمان ملک کے اڑتالیس گھنٹے نہیں ہوئے۔ پھر وہ کہنے لگا اب آپ لیاری کا معاملہ دیکھیں ایک ہفتہ تک آپریشن ہوتا رہا اس دوران ایک بھی مطلوب مجرم یا کوئی بڑا گینگسٹر نہ تو مارا گیا اور نہ ہی پکڑا گیا۔ پولیس چیل چوک اور افشانی گلی سے آگے نہیں جاسکی۔ اندر سے راکٹ فائر ہوتے رہے اور دستی بم پھینکے جاتے رہے۔ ایک بہادر انسپکٹر اور کئی پولیس والے جاں بحق ہوگئے۔ رحمان ملک صاحب اچانک فرمانے لگے کہ لیاری میں طالبان، را کے ایجنٹ، القاعدہ کے دہشت گرد اور منشیات فروشوں کے گروہ حکومت کے خلاف اکٹھے ہو کر صف آرا ہیں۔ اگلے ہی روز انہوں نے آپریشن بند کروا دیا اور دہشت گردوں کو اپنا مشہور زمانہ اڑتالیس گھنٹوں والا نوٹس دے کر کہا کہ وہ ان اڑتالیس گھنٹوں میں ہتھیار پھینک دیں اور سرنڈر کردیں وگرنہ ان کے خلاف رینجرز کے ذریعے آپریشن کیا جائے گا۔ اڑتالیس چھوڑ دو سوا اڑتالیس گھنٹوں سے زیادہ وقت گزر چکا ہے نہ تو دہشت گردوں اور مجرموں نے ہتھیار ڈالے ہیں نہ سرنڈر کیا ہے اور نہ ہی کوئی آپریشن شروع ہوا ہے۔ لیاری کی مظلوم عوام پھر دہشت گردوں، بھتہ خوروں، منشیات فروشوں اور گینگ وار لارڈز کے ہاتھوں یرغمال ہے۔ راکٹ لانچروں والے لیاری میں موجود ہیں۔ پاکستان کی اقتصادی شاہ رگ کراچی کا ایک بڑا علاقہ حکومتی رٹ سے نکل چکا ہے۔ حکومت کو رتی برابر فکر نہیں ایم کیو ایم کو لیاری کے بجائے سرائیکی صوبے کی فکر ہے اور اسے این پی کو ہزارہ صوبے کے حامیوں کو کوسنے دینے سے فرصت نہیں مل رہی۔ سوات بھی اسی طرح حکومت کے ہاتھ سے نکل گیا تھا اور پھر فوج بلانی پڑی تھی۔ یہ ہمارے حکمرانوں کو چیزیں بروقت کیوں دکھائی نہیں دیتیں۔ اور جب لوگ رحمان ملک کی بات نہیں سنتے وہ اس طرح روز روز بے عزت اور بے توقیر ہونے سے باز کیوں نہیں آجاتے؟ پھر وہ لجاجت سے کہنے لگا۔ صاحب! آپ اخبار میں میری طرف سے انہیں بتا دیں کہ میں نے ان کا نام رحمان ملک اڑتالیس گھنٹوں والا رکھ دیا ہے۔
    مجھے رحمان ملک کے اڑتالیس گھنٹوں والے نوٹس سے یاد آیا کہ میرے محترم جنرل حمید گل صاحب اپنے ٹی وی ٹاک شوز میں بڑے یقین سے فرمایاکرتے تھے کہ اگر پاکستان صرف ایک ماہ یعنی تیس دن کے لئے نیٹو کی سپلائی روک دے تو امریکہ گھٹنے ٹیکنے پر مجبور ہو جائے گا۔ آج ایک سو چوہتر دن کے بعد ہم نے امریکہ کے سامنے غیر مشروط گھٹنے ٹیک دیئے ہیں۔ جنرل صاحب پاکستان کی جغرافیائی اور نام نہاد تزویراتی اہمیت کو مد نظر رکھ کر حساب لگاتے رہے تھے انہیں پاکستان کی جغرافیائی اور تزویراتی اہمیت کے بجائے عشروں سے بھک منگے اور دست سوال دراز کرنے والے حکمرانوں کی حمیت سے عاری طبیعت کو مد نظر رکھتے ہوئے حساب کتاب کرنا چاہئے تھا۔ کیٹ واک میں حصہ لینے کی اہلیت رکھنے والی وزارت نے چار پانچ ماہ پہلے امریکی معافی کو کسی مناسب وقت کیلئے ملتوی کروایا تھا لیکن امریکی معافی، سلالہ چیک پوسٹ کے شہداء کیلئے امریکی معاوضہ، نیٹو سپلائی پر ٹیکس اور ڈرون حملوں کا معاملہ سب کچھ بھاڑ میں گیا۔ اب حکمرانوں اور سپہ سالاروں کو مالی مشکلات آن پڑی ہیں اور ایک پنجابی محاورے کے مطابق سب کے ستو مک گئے ہیں۔

  49. Pak1stan1 says:

    I have a conviction that Imran Khan will atain the the status of the greatest leader of Pakistan after Jinnah and leave Bhutto many miles behind. Bhutto did many blunders which were disasterous for Pakistan. He had issues with his mental make up given his abusive language against his opponents and even common people (calling Bangalis “soor”).

    He was not a leader to be inspired from.

    Imran Khan only quotes Bhutto regarding his ascension to power, and NOT his deeds within power. Imran compares the rise of PTI Tsunami to the rise of Bhutto as a matter of political observation. Imran Khan is not inspired from Bhutto. Imran’s only inspiration among Pakistani leaders is the founding father, Jinnah.

    Some people mistake that Imran is inspired from Bhutto, which is not the case. Though Bhutto was indeed a leader with a mix of qualities, unlike the dacoits and corrupt thugs like Nawas and Zardari who don’t deserve to be called “leaders” at all.

  50. پاکستانی سیاستدان says:

    @Pak1stan1

    Nawas Sharif is not even a leader, but a left testicle of Zia-ul-Haq.

    Bhutto did many blunders which were disasterous for Pakistan. He had issues with his mental make up given his abusive language against his opponents and even common people (calling Bangalis “soor”).

    بھائی جی بھٹو میں اور آپ جیسے برگر انقلابیوں میں کوئی فرق نہیں۔ آپ بھی اسی قسم کی زبان استعمال کررہے ہیں جس قسم کی زبان ملک توڑنے والا بھٹو کیا کرتا تھا۔ ویسے عمران خان بھی بھٹو کی طرح دھڑلے سے گالیاں دیتے ہیں۔ انقلاب لانے کے لئے سب سے پہلے اپنے آپ کو بدلنا پڑتا ہے۔ جو لوگ اپنے آپ کو آج تک نہیں بدل سکے وہ انقلاب کیا لائیں گے۔

  51. hypocrite says:

    ایزی گو صاحب۔۔۔۔۔۔
    آپ اور یہاں موجود آپ کے جیسی ہی سوچ کے حامل دوسرے لوگوں کے ساتھ ایک بہت بڑا مسئلہ یہ ہے کہ آپ لوگ فرشتوں کو حکومت کرتے دیکھنا چاہتے ہیں۔۔۔۔۔۔ لیکن اس بہت بڑے مسئلہ کے ساتھ ایک چھوٹا سا مسئلہ یہ ہے کہ انسانی تاریخ میں فرشتوں کی حکومت کبھی بھی نہیں رہی۔۔۔۔۔۔ افسوس صد افسوس۔۔۔۔۔۔ انسانوں نے ہی انسانوں پر حکومت کی ہے یا انسانوں نے انسانوں ہی اپنے اوپر حکومت کرنے کیلئے چنا ہے۔۔۔

    __________

    محترم بلیک شیپ صاحب
    درست فرمایا آپ نے
    یہ تو شکر ہے کے آپ موجود ہیں ورنہ ہم جیسوں کو کون خواب سے جگاتا

  52. hypocrite says:

    انسانوں نے ہی انسانوں پر حکومت کی ہے یا انسانوں نے انسانوں ہی اپنے اوپر حکومت کرنے کیلئے چنا ہے۔

    __________

    عزیز بلیک شیپ صاحب

    میرا خیال نہیں ہے کے لوگ فرشتوں کی حکومت چاہتے ہیں
    فرشتوں کا ہونا یا نہ ہونا
    اور انکا حکومت کرنا یا نہ کرنا
    مرے ننھے دماغ کیسوچ سے باہر ہے
    مگر میں انسانوں کی حکومت چاہتا ہوں
    کیا ہمیں انسانی حکومت میسر آئی ہے کبھی
    یا نہیں

  53. hypocrite says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    ذولفقار علی بھٹو نے ——
    روٹی -کپڑا -مکان —-دیا —-یا—- نہیں دیا
    مکسی نے —ضیاء الحق کو —صحیح بتایا تھا—-جناب—مردہ بھٹو —زندہ بھٹو سے بھی
    زیادہ طاقتور هو گا ———آپ کی فکر اور فلسفہ –موت —-
    اور بھٹو کا عکس — آئندہ نسلوں کے لئے——زندگی کی—علامت ——بن جایں گے………

    ________________

    محترم جاوید صاحب
    آپکے سوالات انتہائی موزوں ہیں
    ان سوالوں کا جواب پتہ نہیں مشکل ہے یا آسان
    مگر ہماری قوم نے شخصیت پرستی پر جو ایمان رکھا ہوا ہے
    بھٹو صاحب ، نواز شریف صاحب ، خان صاحب، بی بی صاحبہ ، ضیاء صاحب وغیرہ وغیرہ
    اسکی جیتی جاگتی مثالیں ہیں
    جب تک شخصیت پرستی پر ہمارا ایمان رہے گا
    ہم ان ہستیوں کے اقتدامت ، نتایج اور فیصلوں کو درگزر کر کے
    صرف نعروں اور تقریروں کے سحر میں کھوۓ رہیں گے
    بات یہ ہے کے یہ ملک اور اسکے عوام پچھلے چونسٹھ سالوں میں آگے بڑھے ہیں
    یا پیچھے
    فوج، سیاستدان اور عوام
    سب کو بہت موقعے ملے
    کون درست کون غلط
    اس پر بھی بحث ہو سکتی ہے
    بات یہ ہے کے آگے بڑھنے کا راستہ کیا ہے
    اور کیا ہم اسکے لیے تیار ہیں
    اور ہم کتنا عرصہ مزید صرف کر سکتے ہیں
    ماضی سے سبق سیکھنا اشد ضروری ہے
    مگر ماضی کے ساتھ چپکے رہنا بھی درست نہیں ہے
    بات اب آگے کی ہونی چایہے نہ کے گزرے ماضی کی یاد میں آہیں بھرنے کی

  54. Javed Ikram Sheikh says:

    In History, there are certain individuals, who inspire the next generations to keep on doing further advances.

    This is not ‘Worship’ but recognition of tatlent, capabilitiy, wisdom and skill of Leaders, Scientists, Sportsmen, Inventers, Poets, Artists—-who laid down Bookmarks in History.

    Every Institution needs a ‘driver at the Steering’ and in a Democratic System, voters have choice to chose or change the DRIVER.

  55. بلیک شِیپ says:

    Shirazi said:
    @Bawa Ji

    I have voted against PPP yet I am ‘Pujari’ … did u ever vote against PML – A to Z? Do you cl@ssify your consistency as pooja or patriotism?

    :-) 😉 :-)
    شیرازی صاحب۔۔۔۔۔۔
    یہ آپ کیسی باتیں کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔ کیا آپ کو معلوم نہیں کہ آسمان سے کیسی صُور جیسی آواز آئی تھی کہ مُسلم ہے تو مسلم لیگ میں آ۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ بس کچھ کافر فلمساز حضرات نے اس مشہور جملے کا غلط مطلب نکال کر یہ مشہور کرنا شروع کردیا کہ پیا تو اب تو آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔
    ہکابکا صاحب کے الفاظ میں صالح مومنین، عفیفہ فوج اور پاکباز مسلم لیگی قیادت تو شروع سے ہی ہم نوا و ہم پیالہ و ہم بستر تھے۔۔۔۔۔۔ ایسی پاکباز لیگی قیادت سے کیا ایسی توقع کی جاسکتی ہے کہ وہ کوئی خلافِ شرع حرکت کرے اور اصیل مسلم لیگی باووں کو ووٹ ڈالتے ہوئے کوئی جھجھک ہو۔۔۔۔۔۔
    😉 :-) 😉

  56. بلیک شِیپ says:

    Shirazi said:
    @Bawa Ji

    I have voted against PPP yet I am ‘Pujari’ … did u ever vote against PML – A to Z? Do you cl@ssify your consistency as pooja or patriotism?

    :-) 😉 :-)
    شیرازی صاحب۔۔۔۔۔۔
    یہ آپ کیسی باتیں کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔ کیا آپ کو معلوم نہیں کہ آسمان سے کیسی صُور جیسی آواز آئی تھی کہ مُسلم ہے تو مسلم لیگ میں آ۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ بس کچھ کافر فلمساز حضرات نے اس مشہور جملے کا غلط مطلب نکال کر یہ مشہور کرنا شروع کردیا کہ پیا تو اب تو آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔ آ آ آ آجا۔۔۔۔۔۔

    ہکابکا صاحب کے الفاظ میں صالح مومنین، عفیفہ فوج اور پاکباز مسلم لیگی قیادت تو شروع سے ہی ہم نوا و ہم پیالہ و ہم بستر تھے۔۔۔۔۔۔ ایسی پاکباز لیگی قیادت سے کیا ایسی توقع کی جاسکتی ہے کہ وہ کوئی خلافِ شرع حرکت کرے اور اصیل مسلم لیگی باووں کو ووٹ ڈالتے ہوئے کوئی جھجھک ہو۔۔۔۔۔۔
    😉 :-) 😉

  57. بلیک شِیپ says:

    محترم ایزی گو۔۔۔۔۔۔
    میں نے کچھ عرصہ پہلے یہاں ایک بات کی تھی کہ ہمدردی ایک خطرناک جذبہ بھی ہے جو بعض اوقات آپ کو دوسروں سے زیادتی کرنے پر بھی مجبور کردیتا ہے۔۔۔۔۔۔
    اب آپ خود دیکھیں کہ چونکہ آپ کو پیپلز پارٹی کی حکومت سے کافی سے کہیں زیادہ شکایات ہیں، جن میں سے کچھ کو، خاص طور پر جو کارکردگی کے بارے میں ہیں، مَیں جائز مانتا ہوں، لیکن ان شکایات کی بناء پر آپ کو غیر منتخب شدہ اداروں(آپ سمجھ ہی گئے ہوں گے) کی عوام کے اکثریتی ووٹوں سے منتخب شدہ حکومت سے زیادتی نظر آنا بند ہوجاتی ہے۔۔۔۔۔۔
    لوگوں سے ہمدردی کے جذبہ سے شدید متاثر اپنے ذہن کو کبھی اس سمت میں سوچنے پر بھی مجبور کیجئے کہ عوام کی مرضی سے منتخب شدہ حکومت کو گھر بھیجنے کا اختیار کس کے پاس ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔ اور اس سلسلے میں کیا طریقہِ کار ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔ اور کیا ترقی یافتہ ممالک میں ایسا ہوتا ہے، جن کی مثالیں ہمارے اخلاقیات کے ٹھیکیدار دیتے پھرتے ہیں کہ وہاں کی سب سے اونچی عدالت کے چوہدری کو بچپن سے پنجابی فلموں کی بڑھکیں لگانے کا شوق ہو۔۔۔۔۔۔ یا پھر اللہ کے برگزیدہ خاکی بندے و آبپاری فرشتے عوام کے منتخب نمائندوں کا مستقبل طے کریں گے۔۔۔۔۔۔ ویسے اور کون کون سے ترقی یافتہ ممالک کی عدالتوں کے جج حضرات مشہور قانونی ماہر جنابِ خلیل جبران کے عمدہ قانونی فیصلوں کی مثالیں دیتے ہیں اگر کوئی ہوں تو ضرور مطلع کیجئے گا۔۔۔۔۔۔
    لیکن میرے دوست جب خاکی و سیاہ اخلاقیات کے شہسوار بندوق یا قلم پر زور عوام کی منتخب حکومت کو دباؤ میں لانے کی کوشش کریں تو میری اخلاقیات مجھے خاکی وردی یا سیاہ کوٹوں والی صِف میں کھڑا نہیں ہونے دیتی۔۔۔۔۔۔ میری بھی مجبوری ہے۔۔۔۔۔۔ آپ کی اعلیٰ اخلاقی اقدار کا مجھے علم نہیں لیکن پھر بھی جیسا کہ میں نے کہا کہ ہمدردی ایک خطرناک جذبہ ہوتا تھا جو آپ کو دوسروں سے زیادتی کرنے پر بھی مجبور کردیتا ہے۔۔۔۔۔۔
    :-) 😉 :-)

  58. aliimran says:

    زرداری، گیلانی، فضلو، نواز اور باقی سیاست دان کھربوں کی چوری کریں تو عدالت
    کی سزا کے باوجود ان کو آئینی استثنیٰ حاصل ہے یہ غربت افلاس اور بھوک کے مارے
    چوری کریں تو——– مجرم ؟
    واہ میرے مولا تیرے قربان- یہ منحوس ایس ایچ او یقینا لمبی دیہاڑی لگاتا ہے مگر اسے
    پوچھنے والا کوئی ہے ؟
    اس کو یہ اختیار کس نے دیا ہے کہ ملزم کو مجرم بنا دے اور بد تمیزی سے پیش آے
    اس کی جرائت نہیں کہ کسی افسر اور سیاست دان کے کتےکو برا بھلا کہہ سکے
    کیا یہ انصاف ہے ؟
    http://www.youtube.com/watch?feature=player_embedded&v=qCEX7k08_lA

  59. پاکستانی سیاستدان says:

    ہمیشہ کی طرح سلیم صافی کا حقیقت پسندانہ تجزیہ

    http://jang.net/urdu/details.asp?nid=621723

    بڑے بے آبرو ہوکر” تری سپلائی ہم کھولیں“…جرگہ…سلیم صافی

    ”ہم نے ابھی تک یہ بھی واضح نہیں کیا کہ ہم نے امریکہ کی مزاحمت کرنی ہے یا کہ پھر پورے پورے نیٹو کی۔ اگر تو حملہ دانستہ ہوا ہے تو یقینا یہ امریکہ ہی نے کیا ہوگا اور اس میں نیٹو کے دیگر اتحادی شریک نہیں ہوں گے لیکن ہم نیٹو کا نام لے کر پوری مغربی دنیا کو اپنا دشمن بنانے پر تلے ہوئے ہیں۔ ہم اگر واقعی سنجیدہ ہیں اور ماضی کی طرح اپنے امیج کی بہتری کیلئے امریکہ کے ساتھ دشمنی کا ڈرامہ نہیں رچارہے ہیں تو پھر امریکہ کے مقابلے کیلئے صرف چین اور ایران کو نہیں بلکہ پوری دنیا کو ساتھ لینا ہوگا۔ یورپ امریکی کیمپ میں ضرور ہے لیکن پاکستان اور افغانستان سے متعلق ہر معاملے میں اس کا ہمنوا ہر گز نہیں ۔ اسی طرح برطانیہ کی بھی پاکستان سے متعلق سوچ مختلف ہے۔ نیٹو میں تو ترکی جیسا ملک بھی شامل ہے تو کیا اب ہم اس کو بھی دشمن بنانا چاہتے ہیں ؟۔ اسی لئے امریکہ کو سنگل آوٹ کرکے یورپ اور نیٹو میں شامل دیگر ممالک کو بھی اپنے ساتھ ملا لینا چاہئے ۔ تماشہ یہ ہے کہ شرارت امریکہ نے کی ہے لیکن ہمارے سینیٹر رضاربانی نے برطانیہ کا دورہ منسوخ کیا ۔ اسی طرح بون کانفرنس کا میزبان جرمنی اور افغانستان ہیں لیکن ہم نے امریکہ کے سامنے احتجاج کی غرض سے وہاں کا بھی بائیکاٹ کردیا۔ بہرحال جو ہونا تھا سو ہوچکا لیکن اگر امریکہ کے سامنے ڈٹ جانے کے دعوے ماضی کی طرح ڈرامہ بازی نہیں اور سچ مچ ایسا کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے تو پھر نہ صرف ملک کے اندر سول اور سیاسی قیادت کو مستقبل کے لائحہ عمل کے حوالے سے ہم آہنگی پیدا کرلینی چاہئے بلکہ روس‘ چین‘ ایران ‘ وسط ایشیائی ریاستوں کے ساتھ ساتھ نیٹو میں شامل دیگر مغربی ممالک کے اندر بھی بھرپور لابنگ ہونی چاہئے ۔ اسی طرح ہندوستان کے ساتھ بھی معاملات بہتر بنانے ہوں گے ورنہ تو وہ والی صورت حال بن جائے گی جس سے جنرل پرویز مشرف نائن الیون کے بعد پاکستانیوں کو ڈراتے تھے۔“
    یہ گزارشات کی تھیں 3 دسمبر 2011 ء کو شائع ہونے والے ”جرگہ“ میں۔ جبکہ گزشتہ آٹھ ماہ کے دوران تسلسل کے ساتھ یہی عرض کرتا رہا کہ اپنی قوت اور حیثیت دیکھ کر امریکہ اور اس کے مغربی اتحادیوں سے پنگا لیا جائے لیکن اس موقف پر جہاں ان لوگوں‘ جو ماضی میں امریکہ کی خوب خدمت گذاری کرچکے ہیں‘ کی طرف سے گالیاں پڑتی رہیں ‘ وہاں دوسری طرف اس عرصہ میں حکومتی ترجمان بھی ہمیں امریکہ کی زیادتیوں کے ساتھ ساتھ اپنی قومی غیرت و حمیت اور بارگیننگ پاور کے قصے سناتے رہے ۔ اسٹیبلشمنٹ اور سیاسی قیادت کے مابین ایک مقابلہ گرم ہوگیا تھا اور ایک دوسرے سے بڑھ کر بہادر اور امریکہ مخالف ہونے کاتاثردیا جارہا تھا۔ مذہب فروش سیاسی رہنما اور اسلام آباد‘ کراچی اور لاہور کے ائرکنڈیشنڈ کمروں میں بیٹھ کر قوم کے سامنے ”بے خطر کود پڑا آتش نمرود میں عشق“ کا ورد کرنے والے اینکرز اور کالم نگار کیا کم تھے کہ پیپلز پارٹی اور اے این پی کے رہنما بھی عوام کو گمراہ کرنے کے لئے دفاع پاکستان کونسل کے رہنماؤں جیسی گفتگو کرنے لگے تھے اور اب جب امریکہ مخالف جذبات عروج پر پہنچ گئے تو حسب سابق ایک بار پھر اسٹیبلشمنٹ اور سیاسی حکومت نے باجماعت امریکہ کی قدم بوسی شروع کردی اور لامحالہ اب پہلے سے بھی زیادہ سخت ردعمل سامنے آئے گا جس میں پھر امریکہ مخالف غریب پاکستانیوں کے اسکول تباہ ہوں گے ‘ اور غریبوں ہی کے جسموں کے پرخچے بم دھماکوں میں اڑتے رہیں گے ۔ امریکہ سے جوخیرات ملے گی ‘ وہ حسب سابق پاکستانی بڑوں کے اللے تللوں یا ان کے لئے بلٹ پروف گاڑیوں کی خریداری یا پھر ان کے بچوں کے بیرون ملک عیاشیوں پر خرچ ہوگی ۔لیکن یہ پہلی بار نہیں ہوا ۔ پچھلے تین سالوں میں یہ ڈرامہ بازی ہمیں کئی بار دیکھنے کو ملی ۔ ریمنڈ ڈیوس کی گرفتاری کے بعد جب اسی طرح کا ڈرامہ رچایا گیا تو اپنا ایک ہی جواب ہوتا تھا کہ دونوں فریق (امریکہ اور پاکستان) حسب سابق پرانی تنخواہ پر کام کرتے رہیں گے۔ 2/مئی اور مائیک مولن کے بیانات کے بعد کی جذباتی فضا جیسے مواقع پر بھی یہی جواب دیتا رہا ۔ سلالہ حادثہ کے بعد جب ایک بار پھر ڈرامہ بازی کا آغاز ہوا تو اپنا یہی جواب ہوتا تھا کہ کچھ بھی نہیں ہوگا ‘ جلد یا بدیر پرانی تنخواہ پر دوبارہ کام کا آغاز ہوگا۔ لیکن افسوس کہ اس بار میرا اندازہ غلط ثابت ہواکیونکہ اب کی بار سابقہ سے بھی کم تنخواہ پر کام کا آغاز ہونے جارہا ہے ۔ بون کانفرنس جیسے کئی اہم مواقع بھی ضائع کئے۔ افغانستان کے مستقبل کے تعین کیلئے کئی اہم مواقع پر کردار سے بھی اپنے آپ کو محروم رکھا‘ امریکی اور مغربی میڈیا سے اپنے آپ کو گالیاں بھی خوب پڑوائیں‘ ان ممالک میں اینٹی پاکستانزم کومزید بڑھاوا دینے کا ذریعہ بھی بنیں ‘ کئی عالمی فورمز اور مالیاتی اداروں سے اپنے معاملات بھی متاثر کروائے اور اب ایسا بھی نہیں کہ نوکری پرانی شرائط پر خود بخود بحال ہوگئی بلکہ ہم منتیں کرکے نوکری بحال کرارہے ہیں ۔ نہ ڈرون حملے بند ہوں گے اور نہ امریکہ اس سطح پر معافی مانگے گا‘ جس طرح کہ ہم توقع کررہے تھے لیکن نیٹو سپلائی بحال ہوجائے گی ۔گویا بڑے بے آبرو ہوکر ہم نیٹو سپلائی بحال کرنے جارہے ہیں۔
    ہمارے ساتھ ایسا ہر بار کیوں ہوتا ہے ؟ جواب اس سوال کا یہ ہے کہ پاکستان شاید دنیا کا واحد ملک ہے کہ جس میں خارجہ پالیسی اور نیشنل سیکورٹی کے ایشوز کی بنیاد پر داخلی سیاست چمکائی جاتی ہے ۔ ان ایشوز سے متعلق پی پی پی اور مسلم لیگ (ن) جیسی جماعتوں کا موقف میرٹ یا اصول پر مبنی ہوتا ہے اور نہ جماعت اسلامی ‘ جے یو آئی‘ تحریک انصاف اور دفاع پاکستان کونسل جیسی جماعتوں کا ۔ ریٹائرڈ جرنیل صاحبان بڑھکیں مارتے وقت میرٹ اور حقیقت پسندی سے کام لیتے ہیں اور نہ اینکرز اور تجزیہ نگار۔ خوف‘ لالچ ‘ شخصی و گروہی مفاد یا پاپولرز کی بنیاد پر ہر کوئی رائے بناتا اور اس کا اظہار کرتا ہے ۔ اسی طرح ملکی اسٹیبلشمنٹ بھی ان ایشوز کی بنیاد پر ملک کے اندر ادارہ جاتی مفادات کی جنگ لڑتی رہتی ہے ۔ اب کی بار بھی معاملہ زیادہ اس لئے خراب ہوا کہ اسٹیبلشمنٹ اور سول حکومت ایک دوسرے کے ساتھ ان ایشوز کی بنیاد پر باہمی سیاست کرتی رہیں ‘ جس کا نتیجہ اس رسوائی کی صورت میں نکلا ۔ بہر حال جو ہوا سو ہوا ‘ اس سے سبق لے کر اب مستقبل کے لئے ان ڈراموں کا خاتمہ کرنا چاہئے۔ حکومت اور اسٹیبلشمنٹ کو چاہئے کہ وہ ان ایشوز پر ایک دوسرے کے ساتھ حساب برابر کرنے کا یہ گندہ کھیل ختم کردیں۔ بڑے شہروں کے فائیوسٹار ہوٹلوں میں امریکہ کے خلاف جہاد کے اعلانات کرنے والوں کو چاہئیے کہ اب وہ مزید قوم کے جذبات سے کھیلنا چھوڑ دیں ۔ ان کی حالت یہ ہے کہ پاکستان کے اندر تو قیادت تبدیل نہیں کراسکتے طرف امریکہ سے لڑنے چلے ہیں ۔ وہ خود تو نادیدہ قوتوں کی سرپرستی کے بغیر ہل نہیں سکتے‘ لیکن چیلنج کرنے چلے ہیں امریکہ کو ۔ حالانکہ جن نادیدہ قوتوں کے اشارے کے بغیر یہ لوگ نہیں ہل سکتے خود وہی قوتیں امریکی مرضی کے بغیر ہل نہیں سکتیں۔یہ لوگ ہمیں افغانستان اور طالبان کی مثالیں دے کر امریکہ سے دودوہاتھ کرنے کا مشورہ دیتے ہیں لیکن یہ نہیں دیکھتے کہ زرداری اور گیلانی تو کیا خود یہ لوگ بھی ملامحمد عمر جیسے نہیں ہیں۔ افغانی امریکہ سے ٹکر لے سکتے ہیں کیونکہ ان کے ہاں اسٹاک ایکسچینجز ہیں اور نہ وہ ہمارے مذہبی لیڈروں اور ریٹائرڈ جرنیلوں کی طرح پرتعیش زندگی کے عادی ہیں ۔ان کا لیڈر ملا محمد عمر ہے ‘ جو خود بھی پوری زندگی یورپ اور امریکہ تو کیا کبھی سعودی عرب بھی نہیں گیا ۔ ہمارے لیڈران کے بچے امریکہ اور یورپ میں رہتے ہیں اور نقالی کرنے لگے ہیں ملامحمد عمر کی۔ یہ پاکستان ہے اس لئے اپنی حیثیت اور صلاحیت کے مطابق کلام کرنا چاہئے۔

  60. atruepakistani says:

    بلیک شِیپ said:
    لیکن میرے دوست جب خاکی و سیاہ اخلاقیات کے شہسوار بندوق یا قلم پر زور عوام کی منتخب حکومت کو دباؤ میں لانے کی کوشش کریں تو میری اخلاقیات مجھے خاکی وردی یا سیاہ کوٹوں والی صِف میں کھڑا نہیں ہونے دیتی۔۔۔۔۔۔ میری بھی مجبوری ہے۔۔۔۔۔۔ آپ کی اعلیٰ اخلاقی اقدار کا مجھے علم نہیں لیکن پھر بھی جیسا کہ میں نے کہا کہ ہمدردی ایک خطرناک جذبہ ہوتا تھا جو آپ کو دوسروں سے زیادتی کرنے پر بھی مجبور کردیتا ہے۔۔۔
    ————————————
    Bht acha,,,,,,Democracy is the only tool for change in Pakistan.Let the people decide their future.Democracy will bring prosperity in Pakistan..Any other way is destruction and blood shed.Lets support democracy for a better Pakistan.

  61. زالان says:

    پاکستانی سیاستدان said:

    جاوید چودھری مولانا اسلم شیخو پوری شہید –
    http://www.express.com.pk/epaper/PoPupwindow.aspx?newsID=1101525196&Issue=NP_LHE&Date=20120518

    ——————————————

    نفرتیں پھیلا کر پیسے کمانے والا مولوی ، جاوید چودری نے یہ نہیں بتایا ہے اسے شیخو پورا سے بریلویوں نے دھکے مار کر نکالا تھا ،پھر کراچی آ کر امریکہ کو تڑیاں لگاتا اور پیسے کماتا رہا

  62. EasyGo says:

    Shirazi said:
    @EasyGo Saab

    All I said we can’t pass the blame to ruling class – civil or military; we the people need to share the blame for chaos. Of course it will never be perfected. This journey of perfecting the union will keep on.

    If you have a short cut, pls share.

    =========
    شیرازی صاحب

    میں تو آپ کی کافی باتوں سے متفق ہی ہوں، صرف سارا الزام عوام کو دینے پر جھنجھلاہٹ ہوتی ہے
    موجودہ حالات میں عوام سے بہت ساری توقعات رکھنا ایسے ہی لگتا ہے جیسے باپ کچھ سکھایے بغیراپنی اولاد سے بہتر نتائج مانگے
    آپ کہتے ہیں سفر کا آغاز عوام کرینگے، مجھے لگتا ہے حکمران کریں تو جلدی ہو جایگا، نہیں تو ٹھیک ہے پھر انتظار کرتے ہیں سارے عوام کے نقطۂ انجماد سے باہر نکلنے کا
    سیاستدانوں کے اپنے رویے اور کارگردگی میں بہتری کی گنجائش نہ ہوتی تو میثاق جمہوریت کی ضرورت پیش نہ آتی، اب اس پر کتنا عمل ہوا، یہ سوچنے والی بات ہے اور اگرعمل ہوتا تو کیا عوام کے لئے کچھ بہتر ہوتا یہ بھی سوچنے والی بات ہے
    باقی شارٹ کٹ تو کیا ہمیں تو ممکن حل بھی نظر نہیں آتا، جب کہتے ہیں ووٹ دے دیتے ہیں کہ ہمارے نمائندے بہتردماغ والوں کی مدد سے ہمارے لئے کچھ کریں گے

  63. EasyGo says:

    @17 May 2012 at 9:01 pm

    شیرازی صاحب

    میں تو آپ کی کافی باتوں سے متفق ہی ہوں، صرف سارا الزام عوام کو دینے پر جھنجھلاہٹ ہوتی ہے
    موجودہ حالات میں عوام سے بہت ساری توقعات رکھنا ایسے ہی لگتا ہے جیسے باپ کچھ سکھایے بغیراپنی اولاد سے بہتر نتائج مانگے
    آپ کہتے ہیں سفر کا آغاز عوام کرینگے، مجھے لگتا ہے حکمران کریں تو جلدی ہو جایگا، نہیں تو ٹھیک ہے پھر انتظار کرتے ہیں سارے عوام کے نقطۂ انجماد سے باہر نکلنے کا
    سیاستدانوں کے اپنے رویے اور کارگردگی میں بہتری کی گنجائش نہ ہوتی تو میثاق جمہوریت کی ضرورت پیش نہ آتی، اب اس پر کتنا عمل ہوا، یہ سوچنے والی بات ہے اور اگرعمل ہوتا تو کیا عوام کے لئے کچھ بہتر ہوتا یہ بھی سوچنے والی بات ہے
    باقی شارٹ کٹ تو کیا ہمیں تو ممکن حل بھی نظر نہیں آتا، جب کہتے ہیں ووٹ دے دیتے ہیں کہ ہمارے نمائندے بہتردماغ والوں کی مدد سے ہمارے لئے کچھ کریں گے

  64. EasyGo says:

    چونکہ آپ کو پیپلز پارٹی کی حکومت سے کافی سے کہیں زیادہ شکایات ہیں، جن میں سے کچھ کو، خاص طور پر جو کارکردگی کے بارے میں ہیں، مَیں جائز مانتا ہوں، لیکن ان شکایات کی بناء پر آپ کو غیر منتخب شدہ اداروں(آپ سمجھ ہی گئے ہوں گے) کی عوام کے اکثریتی ووٹوں سے منتخب شدہ حکومت سے زیادتی نظر آنا بند ہوجاتی ہے۔۔۔۔۔۔
    لوگوں سے ہمدردی کے جذبہ سے شدید متاثر اپنے ذہن کو کبھی اس سمت میں سوچنے پر بھی مجبور کیجئے کہ عوام کی مرضی سے منتخب شدہ حکومت کو گھر بھیجنے کا اختیار کس کے پاس ہوتا ہے۔۔۔۔۔۔

    بلیک شیپ صاحب
    تسلیم ہے کہ ایسا تعصب ہوگا کیونکہ میری سوچ آپکی طرح مضبوط نہیں ہے، ایسا کیوں ہے یقیناً آپ اندازہ کر سکتے ہیں
    میرے خیال میں حکومت اور عوام کے درمیان ہمدردی سے زیادہ کچھ لو اور کچھ دو والا تعلق ہے، عوام کو کچھ دیے بغیر انسے یہ توقع کہ وہ آپکے پیچھے کھڑے رہینگے، یہ بھی زیادتی ہی لگتی ہے، پھر جیسے وزیراعظم کہتے ہیں “تو چلیں جایئں باہر انہیں کس نے روکا ہے” عوام بھی کہتے ہیں “بھاڑ میں جایئں سب ہماری بلا سے”
    سچی بات یہ لگتی ہے کہ یہاں ہر کوئی بغیر کچھ کیے صرف حکمرانی کا خواہشمند نظرآتا ہے کہ انکو پتہ ہے ہجوم بے ضرر، بے رایے ہے

    آپ کی اعلیٰ اخلاقی اقدار کا مجھے علم نہیں لیکن پھر بھی جیسا کہ میں نے کہا کہ ہمدردی ایک خطرناک جذبہ ہوتا تھا جو آپ کو دوسروں سے زیادتی کرنے پر بھی مجبور کردیتا ہے

    میری اخلاقی اقدارایک عام انسان کی طرح ہیں جو ظاہر ہے کسی بھی طرح نہ اعلیٰ ہیں نہ صرف فورم پر باتوں سے ہو جائینگی، یہاں ایک سوال ہے کہ یہ کونسا جزبہ ہے جس کے تحت آپ لوگوں کو اپنے تئیں صحیح سوچ کی طرف لانے کی کوشش کرتے ہیں اور پھرکبھی کبھی افسوس بھی کرتے ہیں کہ ناکامی ہو رہی ہے

  65. Bawa says:

    لٹر پولا
    😀 😀 😀

    [img]http://www.somoso.com/news/urdu/wp-content/uploads/2012/05/331.gif[/img]

    [img]http://a3.sphotos.ak.fbcdn.net/hphotos-ak-snc6/163304_379805432056882_303493086354784_953906_710796013_n.jpg[/img]

  66. ukpaki1 says:

    السلام علیکم باوا بھائی

    اب آصف احمد علی جیسے بندے سے اور توقع ہی کیا کی جاسکتی ہے، یہ وہ بندہ ہے جس نے ریمنڈ ڈیوس کے استثنا کے حق میں بیانات بھی دئیے تھے حالانکہ وزیر تعلیم کا کوئی اختیار تھا اس حوالے سے کہ وہ ایک غیر ملکی مجرم کے بارے میں اس طرح کے بیانات دے۔ اور اعظم سواتی بھی آصف حمد علی کے خلاف جو بیانات دے رہا ہے میں سمجھتا ہوں اس پہ بھی غور ہونا چاہیے۔

    ویسے خورشید قصوری، سردار آصف احمد علی، وڑائچ، جمال اور اویس لغاری جیسے لوگوں کو سب ہی جانتے ھیں۔۔ اور ان جیسے لوگوں کی تحریک انصاف میں شمولیت سے جماعت کی ساکھ بہت متاثر ہوئی ہے۔

  67. Javed Ikram Sheikh says:

    A word of advice, based upon reality—-cannot be digested, understood and appreciated by victims of close mindedness.
    Any one with a small potency of common sense, will endorse what Sardar Asi Ali has said.

    I repeat what I wrote at the beggining of the thread:
    “1. No Civil and Military Government in Pakistan can afford to ignore American Advice.”

  68. ukpaki1 says:

    salam
    No Civil and Military Government in Pakistan can afford to ignore American Advice.
    _______________________________________________________________
    Sheikh sahab.. i believe a literary person like u very well understands the difference between advice and dictation…
    May ALLAH bless Pakistan and Pakistanis.

  69. Bawa says:

    اگر کوئی سندھ کی تقسیم نہیں چاہتا ہے تو پھر پجاریوں اور نائیوں کی کربناک چیخیں کیوں نکل رہی ہیں؟

    😀 😀 😀
    :mrgreen: :mrgreen: :mrgreen:

    [img]http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/19-05-2012/updates/5-19-2012_107312_1.gif[/img]

  70. Bawa says:

    ukpaki1 said:
    السلام علیکم باوا بھائی

    اب آصف احمد علی جیسے بندے سے اور توقع ہی کیا کی جاسکتی ہے، یہ وہ بندہ ہے جس نے ریمنڈ ڈیوس کے استثنا کے حق میں بیانات بھی دئیے تھے حالانکہ وزیر تعلیم کا کوئی اختیار تھا اس حوالے سے کہ وہ ایک غیر ملکی مجرم کے بارے میں اس طرح کے بیانات دے۔ اور اعظم سواتی بھی آصف حمد علی کے خلاف جو بیانات دے رہا ہے میں سمجھتا ہوں اس پہ بھی غور ہونا چاہیے۔

    ویسے خورشید قصوری، سردار آصف احمد علی، وڑائچ، جمال اور اویس لغاری جیسے لوگوں کو سب ہی جانتے ھیں۔۔ اور ان جیسے لوگوں کی تحریک انصاف میں شمولیت سے جماعت کی ساکھ بہت متاثر ہوئی ہے۔

    و علیکم السلام بھائی جی

    بالکل درست کہا آپ نے. سردار آصف احمد علی اور اس قبیل کے لوگ ڈالروں کی خاطر اپنی ماں بیچنے کو بھی تیار بیٹھے ہوتے ہیں. یقینا ایسے لوگوں کی آمد نے تحریک انصاف کا سارا پول کھول دیا ہے

    یہ بے غیرتی، بے شرمی اور بے حیائی کی انتہا ہے کہ امریکہ سے معافی مانگنے کی شرط پر نیٹو سپلائی بحال کرنے والے بھٹو کے پجاری اب سو جوتے کھا کر اور سو پیاز کھا کر بغیر معافی منگوائے نیٹو سپلائی کھولنے جا رہے ہیں

    ڈالروں کی ہوس کی انتہا دیکھیے کہ کیسے امریکہ کے ایک اشارے پر ہڈی کے حصول کی خاطر بھاگے بھاگے شکاگو گئے ہیں

  71. Javed Ikram Sheikh says:

    I guess our intellectuals are intelligent enough to understand that whatever comes from America—–is always—in the form —of advice.

    This might be due to a deep rooted complex of inferiority—-that—-all America Advices since 1947—-are interpreted ——-as Dictation.

    In short——America is very much IN—-
    and still there is no hope—to make her OUT.

  72. zalaan says:

    نیٹو کی سپلائی کھولنا اور ان سے ڈالر لینے میں کوئی برائی نہیں اس سے ماں بیچنے جیسی گندی گالی سے ملانا بیوقوفی اور جذباتی پن ہے ، سیدھی سی بات ہے یہ جنگلی طالبان اور آئی ایس آئی اگر یہ جہاد نہ شروع کرتی تو نہ نیٹو آتا اور نہ ہی امریکہ
    اب سارا ہمارا کیا دہرا سامنے آرہا ہے اور اس سے بچے کا ایک ہی حل ہے کہ افغانستان کو امریکہ اور نیٹو کے حوالے کر دیا جائے ورنہ حمید گل کے دہشتگرد اسلام آباد پر بھی قبضہ کر لائے

    عجیب بات ہے ہم سب سے زیادہ دفائی مدد ، پیسے اور اسلحہ امریکہ سے لیتے اے ہیں یہ کام کرنے کے لیہ کیا کسی نے اپنی ماں بیچی تھی ؟
    ابھی حال ہی میں امریکہ نے پاکستان کے ایف سکسٹین اپ گریڈ کرکہ دیه ہیں ، یہ ایف سکسٹین امان کی گرمی سے نہ مل سکتے تھے اور نہ اپ گریڈ ہو سکتے تھے
    امریکہ سے دوستی کی بنیاد نواب ابن نواب لیاقت علی خان نے رکھی تھی اب کیا انہوں نے بھی اپنی ماں بیچی تھی

    جاپان نے امریکی ایٹم بم کے بعد بھی امریکہ کو معاف کیا بلکہ اس کا دوست بن گیا ،کیا آج کا ترقیافتہ جاپان بےغیرتی کیا علامت ہے ؟

  73. Javed Ikram Sheikh says:

    A page from History of Pakistan:

    While taking over charge as Prime Minister, Muhammad Ali Bogra declared Constitution making as one of his primary targets. He worked hard on the project and within six months of assuming power; he came out with a Constitutional Formula. His constitutional proposal is know as Bogra Formula and was presented before the Constituent Assembly of Pakistan on October 7, 1953. The plan proposed for a Bicameral Legislature with equal representation for all the five provinces of the country in the Upper House. Total of 50 seats were reserved for the Upper House. 300 seats for the Lower House were to be allocated between the provinces on the basis of proportionate representation. 165 seats were reserved for East Pakistan, 75 for the Punjab, 19 for Sind and Khairpur, 24 for N.W.F.P, tribal areas and the states located in N.W.F.P, 17 for Baluchistan, Baluchistan States Union, Bahawalpur and Karachi. In this way East Pakistan was given more seats in the Lower House than the combined number of seats reserved for the Federal Capital, 4 Provinces and the Princely States of the Western Wing. So in all both the wings were to have 175 seats each in the two houses of the Legislative Assembly. Both the houses were given equal power and in case of a conflict between the two houses, the issue was to be presented before the joint session.
    In order to prevent permanent domination by any wing, a provision was made that if the Head of the State was from West Pakistan, the Prime Minister was to be from East Pakistan and vice versa. Electoral ollege for the Presidential elections was the two houses of the Legislative Assembly and the President was to be elected for a term of 5 years.
    In place of the Board of Ulama Supreme Court was given the power to decide if the law was in accordance with the basic teachings of Quran and Sunnah or not? Unlike the two reports of the Basic Principle Committee, Bogra Formula was appreciated by different sections of the society. There was great enthusiasm amongst the masses as they considered it as a plan, which could bridge up the gulf between the two wings of Pakistan and would act as a source of unity for the country. The proposal was discussed in the Constituent Assembly for 13 days and then a committee was set to draft the constitution. On November 14, 1953 a committee was set to draft the constitution according to the approval of the Constituent Assembly. However, before the constitution was finalized, the Assembly was dissolved by Ghulam Muhammad, the then Governor General of Pakistan.

    And I think this was the beginning of the end of Pakistan and of course earlier the language issue.

  74. Bawa says:

      بھٹو کے پجاریوں کی اوقات 

    😉 😉 😉

    [img]http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/20-05-2012/updates/5-20-2012_107345_1.gif[/img]

  75. ukpaki1 says:

    السلام علیکم

    واہ جی واہ کیا لطیفے پڑھنے کا موقع مل رہا ہے کہ افغانستان کا انتظام امریکہ اور نیٹو کے حوالے کردینا چاہیے مکمل طور پہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نیٹو تو خود وہاں سے بھاگنے کے چکروں میں ہے اسی لیے تو فرانس نے امریکہ کی اس تجویز کو بھی مسترد کریا تھا جس میں اس نے فرانس کو کہا ہے اس سال کے آخر تک یا جلدی اپنی فوجیں نہ نکالے۔ اور دوسری بات یہ کہ ابھی دو دن پہلے ہی جلال آباد کا کنٹرول نیٹو نے مقامی سیکورٹی اہلکاروں کو دیا ہے طالبان کے ڈر سے۔

    روز جس طرح نیٹو وغیرہ کے جوان فوجی وہاں پہ مارے جاتے ھیں تو وہاں کی حکومتوں نے بھی اپنی عوام کو جواب دینا ہوتا ہے۔ اور جو مارے گئے وہ تو مارے گئے اس کے علاوہ جو معذور ہوئے ان کی تعداد بھی بہت بڑی ہے۔ کبھی پڑھنا اس بارے میں غیر جانبدار ہو کے تو آپ کو پتہ لگے۔

  76. ukpaki1 says:

    اور قائد ملت کے پاس اس وقت روسی بلاک میں جانے کا بھی راستہ تھا لیکن یہ ان سے بہت بڑی غلطی ہوگئی کہ وہ امریکن بلاک میں چلے گئے اصل میں بات مشیروں اور باقی ٹیم کی بھی ہوتی ہے وہ اگر صحیح نہ ہوں تو حکمران اکثر غلطی کرجاتے ھیں۔

    اور ہاں امریکہ واقعی بہت بڑا بیوپاری ہے اسلحے کا اور دنیا جو اسلحہ سے لیس ہوئی ہے وہ بھی امریکہ کی وجہ سے ھی ہے، ہمسایوں کو ایک دوسرے سے لڑانے کی مثالیں موجود ہیں۔ صومالیہ اور ایتھوپیا جیسے غریب ممالک تک کو نہیں چھوڑا گیا۔ ایتھوپیا کو صومالیہ کے خلاف اسلحہ فراہم کرنا، ایران اور عراق کی آٹھ سالہ جنگ میں بھی کہاں سے اسلحہ آتا تھا یہ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں۔

  77. ukpaki1 says:

    whatever comes from America—–is always—in the form —of advice.
    ____________________________________________________
    Sheikh sahab…. it is in the form of advice..so u may call it advice against national interest of pakistan.. lately US advised pakistan to abandon it’s plan for gas pipleline with iran, same message was conveyed to india when clinton recently visited there. would u still call it sincere advice?. US is urging pakistan to launch an assault in tribal areas? would u call it sincere advice.. there r many other examples about advices by America which later turned out to be lethal advises…
    May ALLAH bless Pakistan and Pakistanis.

  78. ukpaki1 says:

    above comment was in response to sheikh sahab’s earlier comment in which he said: whatever comes from America—–is always—in the form —of advice.

  79. Bawa says:

    زیادہ بھیک طلب کرنے کا جدید اور نیا طریقہ

    ایک طرف ہڈی کی طلب میں شکاگو بھاگنا – دوسری طرف امریکی صدر سے معافی کا مطالبہ کرنا ؟؟؟؟؟؟

    بھٹو کے پجاریوں کو اس انوکھے طریقہ بھیک کی دریافت پر دلی مبارکباد
    .
    .
    [img]http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/20-05-2012/updates/5-20-2012_107382_1.gif[/img]

  80. zalaan says:

    اگر شہباز شریف اور پنجاب کو نیٹو کی سپلائی کھلنے کے پیسے نہیں چاہیے ہیں تو وہ پیسے دوسرے صوبوں کو دے دیے جائیں
    :)

  81. Javed Ikram Sheikh says:

    @ukpaki1,

    All such is part of International Diplomacy and could be reciprocated through Diplomatic skill.

    International Relatiuons cannot be examined ,
    at the level of Elementary School Kids.

    International Politics—-is very close to —the Game of Chess, where players are friendly but at the same time sitting at opposite seats.

  82. Javed Ikram Sheikh says:

    —دو قومی نظریہ سے —پیار کرنے والے
    روٹی–کپڑا- مکان——- نہیں مانگا کرتے
    —-
    بس —- گنا چوستے ہیں…..

  83. Bawa says:

    بھٹو کے پجاریوں کو نظریہ پاکستان کی کھجلی

    ایک مچھر خدائی کا دعوا کرنے والے نمرود کی ناک میں داخل ہوا اور دماغ میں جا کر بیٹھ گیا جب وہ حرکت کرتا تو نمرود کو کھجلی ہوتی اور وہ اپنے سر میں جوتا مارتا جس سے اسے تھوڑا افاقہ ہوجاتا تھا. آہستہ آہستہ جب اسے خود سکوں ملنا بند ہوگیا تو اس نے یہ حکم جاری کر دیا کہ جو درباری بھی دربار میں داخل ہو پہلے بادشاہ کے سر جوتے مارے گا. اسطرح نمرود کی کھجی میں تھوڑا افاقہ ہو جاتا تھا

    آج نظریہ پاکستان بھی ایک مچھر بن کر پجاریوں اور مہا پجاری کے ناک میں داخل ہو کر دماغ میں جا کر بیٹھ گیا ہے. جب وہ حرکت کرتا توانکو کھجلی ہوتی ہے اور پھر کیا ہوتا ہے اور پجاریوں کو کس طرح سکون ملتا ہے؟ وہ آپ سمجھ ہی گئے ہونگے

    😀 😀 😀

    روتی کپڑا مکان کے متلاشی پاکستانی نوجوانوں کی شہنشاہ کرپشن زرداری کو آخری وارننگ

    مسٹر پریزیڈنٹ – ہن بن انسان

    نہ بیچ اپنا تو دین تے ایمان – ہن بن انسان – ہن بن انسان

    http://www.youtube.com/watch?v=6dR7_8RP9Qo

  84. lota6177 says:

    zalaan said:
    نیٹو کی سپلائی کھولنا اور ان سے ڈالر لینے میں کوئی برائی نہیں اس سے ماں بیچنے جیسی گندی گالی سے ملانا بیوقوفی اور جذباتی پن ہے ، سیدھی سی بات ہے یہ جنگلی طالبان اور آئی ایس آئی اگر یہ جہاد نہ شروع کرتی تو نہ نیٹو آتا اور نہ ہی امریکہ
    اب سارا ہمارا کیا دہرا سامنے آرہا ہے اور اس سے بچے کا ایک ہی حل ہے کہ افغانستان کو امریکہ اور نیٹو کے حوالے کر دیا جائے ورنہ حمید گل کے دہشتگرد اسلام آباد پر بھی قبضہ کر لائے

    عجیب بات ہے ہم سب سے زیادہ دفائی مدد ، پیسے اور اسلحہ امریکہ سے لیتے اے ہیں یہ کام کرنے کے لیہ کیا کسی نے اپنی ماں بیچی تھی ؟
    ابھی حال ہی میں امریکہ نے پاکستان کے ایف سکسٹین اپ گریڈ کرکہ دیه ہیں ، یہ ایف سکسٹین امان کی گرمی سے نہ مل سکتے تھے اور نہ اپ گریڈ ہو سکتے تھے
    امریکہ سے دوستی کی بنیاد نواب ابن نواب لیاقت علی خان نے رکھی تھی اب کیا انہوں نے بھی اپنی ماں بیچی تھی

    جاپان نے امریکی ایٹم بم کے بعد بھی امریکہ کو معاف کیا بلکہ اس کا دوست بن گیا ،کیا آج کا ترقیافتہ جاپان بےغیرتی کیا علامت ہے ؟
    ———————————————————————————————————————-چاہے سکندر اعظم سے پورس کا سمجوتا ہو یا پھر سکھوں کا طویل دور حکومت ہو . انگریزوں کا دو سو سال کا دور حکومت ہو . ہماری مسلمانوں کی اصل تاریخ گٹھنے ٹیکنے، وظیفہ لینے اور کتے نہلانے کی تاریخ ہے . مسلمانوں نے سمجوتے کر کے یہ سارا وقت گزارا ہے اور اپنی جائیداد کو بچایا ہے . کچھ مسلمانوں نے غلامی کے ادوار میں آزادی کی جنگہیں لڑنے کی کوشش بھی کی ہیں مگر وہ اپنے ہی بھائی بندوں کے ہاتھوں مارے گے. اب غداروں کی اولادیں سچ تو نہیں بول سکتیں . لہٰذا سب ہی مسلم لیگی ہیں جنہوں نے تحریک پاکستان میں حصہ لیا اور جیل بھی گے . یہ وہ لوگ ہیں جو جس سڑک پر رہیں تو اپنے باپ دادا کا نام تبدیل کر لیتے ہیں اور دوسروں کو فخر سے بتاتیں ہیں کہ اس سڑک کا نام ان کے دادا کے نام پر رکھا گیا . جس کے پاس جو چیز جتنی کم ہو وہ اس کا اتنا ہی زائدہ شور ڈالتا ہے . غیرت کا شور سب سے زائدہ وہ کمی کمین (پنڈ میں اپنے ہاتھ سے کام کرنے والا ) ڈالتا ہے جو شہر میں عزت حاصل کرنا چا رہا ہو . ہمیں کون سے بل آرہا ہے .
    لگے رہو منا بھائی

  85. ukpaki1 says:

    salam
    @sheikh sahab wrote:
    All such is part of International Diplomacy and could be reciprocated through Diplomatic skill.

    International Relatiuons cannot be examined ,
    at the level of Elementary School Kids.

    International Politics—-is very close to —the Game of Chess, where players are friendly but at the same time sitting at opposite seats.
    ________________________________________________________________
    Sir, whatever u wrote it sounds good in books or u may call it thumb rule but ground reality doesn’t match with the books all the time.. the fact is that US knows the worth of pakistani leaders very well.. they r aware of submissive mentality of our rulers and army elite.. internationally they have made mockery of pakistan.. although history is very long but could u pls tell me the one particular occasion in last four years when US ever honored pakistan. one day parliament passed the resolution and within hours US carried out drone attack.. just to make pakistan realize its worth.
    US treats us like a rug seller, who starts off with the high price but ends up selling u at a very low price… so, as long as we remain submissive, US will keep hitting us hard every single day.
    May ALLAH bless Pakistan and Pakistanis.

  86. Javed Ikram Sheikh says:

    @ ukpaki1,

    “US knows the worth of pakistani leaders very well.. they r aware of submissive mentality of our rulers and army elite.. internationally they have made mockery of pakistan.. ”
    ——-
    Then—why to keep on cursing America—-where the fault lies —–with the DNA of Pakistan?

  87. SCheema says:

    بھولے نے بھنگ کا پیالہ منہ کو لگایا اور پھر فرمایا

    “ نیٹو سپلائی کے بغیر پاکستان بلکل ایسے ہی ہو گا جیسے پیپلز پارٹی کے بغیر بابر اعوان “

    اس کے بعد بھولا کانفرنس میں شرکت کے لئے شکاگو چلا گیا ۔

    سو گنڈے تو کھا لئے اب سو چھتروں کے لئے بذات خود تشریف لے کر گئے ہیں

    http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/20-05-2012/u107386.htm

  88. SCheema says:

    lota6177 said:

    چاہے سکندر اعظم سے پورس کا سمجوتا ہو یا پھر سکھوں کا طویل دور حکومت ہو . انگریزوں کا دو سو سال کا دور حکومت ہو . ہماری مسلمانوں کی اصل تاریخ گٹھنے ٹیکنے، وظیفہ لینے اور کتے نہلانے کی تاریخ ہے . مسلمانوں نے سمجوتے کر کے یہ سارا وقت گزارا ہے اور اپنی جائیداد کو بچایا ہے . کچھ مسلمانوں نے غلامی کے ادوار میں آزادی کی جنگہیں لڑنے کی کوشش بھی کی ہیں مگر وہ اپنے ہی بھائی بندوں کے ہاتھوں مارے گے. اب غداروں کی اولادیں سچ تو نہیں بول سکتیں . لہٰذا سب ہی مسلم لیگی ہیں جنہوں نے تحریک پاکستان میں حصہ لیا اور جیل بھی گے . یہ وہ لوگ ہیں جو جس سڑک پر رہیں تو اپنے باپ دادا کا نام تبدیل کر لیتے ہیں اور دوسروں کو فخر سے بتاتیں ہیں کہ اس سڑک کا نام ان کے دادا کے نام پر رکھا گیا . جس کے پاس جو چیز جتنی کم ہو وہ اس کا اتنا ہی زائدہ شور ڈالتا ہے . غیرت کا شور سب سے زائدہ وہ کمی کمین (پنڈ میں اپنے ہاتھ سے کام کرنے والا ) ڈالتا ہے جو شہر میں عزت حاصل کرنا چا رہا ہو . ہمیں کون سے بل آرہا ہے .
    لگے رہو منا بھائی
    ——————————-
    لوٹا جی کے لئے زبان و بیان

    سمجوتا = سمجھوتا
    گٹھنے = گھٹنے
    سمجوتے = سمجھوتے
    جنگہیں = جنگیں
    زائدہ = زیادہ
    شور ڈالتا = شور مچاتا
    چا = چاہ
    ہمیں کون سے بل آرہا ہے = ہمیں کون سا بل آرہا ہے

    آپ نے بلکل صیحیح فرمایا ہے کہ
    “جس کے پاس جو چیز جتنی کم ہو وہ اس کا اتنا ہی زیادہ شور مچاتا ہے“

    آپ کی دانشوری دیکھ کر مجھے اندازہ ہو رہا ہے کہ آپ کے پاس کس چیز کی کمی ہے اور کونسی چیز زیادہ ہے

    لگے رہیں لوٹا جی ۔

    [img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img][img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img]

  89. Bawa says:

    SCheema said:
    بھولے نے بھنگ کا پیالہ منہ کو لگایا اور پھر فرمایا

    “ نیٹو سپلائی کے بغیر پاکستان بلکل ایسے ہی ہو گا جیسے پیپلز پارٹی کے بغیر بابر اعوان “

    اس کے بعد بھولا کانفرنس میں شرکت کے لئے شکاگو چلا گیا ۔

    سو گنڈے تو کھا لئے اب سو چھتروں کے لئے بذات خود تشریف لے کر گئے ہیں

    http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/20-05-2012/u107386.htm

    چیمہ جی

    بھٹو کے پجاری ہڈی کی طلب میں اور فوج اور امریکہ کے کے درمیان دلالی کے فرائض سر انجام دینے بھاگے بھاگے شکاگو تو پہنچ چکے ہیں لیکن اب یہ واضح ہو چکا ہے کہ ان ہڈی خوروں کے ساتھ ایک طرف فوجی اور دوسری طرف امریکی کتے والی کریں گے

    زرداری نے جوتے اور پیاز شیئر کرنے کی غرض سے بلاول کو وہاں بھی بلا لیا ہے تاکہ اسکی بھی ابھی سے جوتے اور پیاز کھانے کی پریکٹس ہو سکے

    http://jang.com.pk/jang/may2012-daily/21-05-2012/updates/5-21-2012_107440_1.gif

    http://jang.net/urdu/details.asp?nid=622094

    صدر زرداری نے ہلری کلنٹن سے ملاقات میں کہا کہ آئندہ سلالہ جیسے واقعات کی اجازت نہیں دی جائے۔

  90. Javed Ikram Sheikh says:

    بے بنیاد خبروں کے مطابق —-امریکہ بہت بڑی تباہی سے بچ گیا —-
    کیونکہ دفاع پاکستان کونسل نے —جنرل حمید گل کی نگرانی میں ——
    امریکہ پر حملہ کرنے کے فیصلے پر غور شروع کر دیا تھا-
    سراغ رساں نامہ نگار کے مطابق —-انھیں اپنا فیصلہ واپس لینا پڑا——
    کیونکہ اس بات پر اتفاق نہیں ھو سکا ——کہ امریکہ کو شکست دینے کے بعد
    بیس لاکھ امریکی جنگی قیدی —کہاں رکھے جایں گے —-
    اور ان کی خوراک کا انتظام کیسے کیا جاۓ گا ———

  91. atruepakistani says:

    Javed Ikram Sheikh said:
    بے بنیاد خبروں کے مطابق —-امریکہ بہت بڑی تباہی سے بچ گیا —-
    کیونکہ دفاع پاکستان کونسل نے —جنرل حمید گل کی نگرانی میں ——
    امریکہ پر حملہ کرنے کے فیصلے پر غور شروع کر دیا تھا-
    سراغ رساں نامہ نگار کے مطابق —-انھیں اپنا فیصلہ واپس لینا پڑا——
    کیونکہ اس بات پر اتفاق نہیں ھو سکا ——کہ امریکہ کو شکست دینے کے بعد
    بیس لاکھ امریکی جنگی قیدی —کہاں رکھے جایں گے —-
    اور ان کی خوراک کا انتظام کیسے کیا جاۓ گ
    ———————————————
    Aik khaber yeh bhi thi ky yahi Hameed Gul Jalal Abad sy paint geeli ker ky bhagy thy

  92. Zia M says:

    آپ نے بلکل صیحیح فرمایا ہے کہ
    “جس کے پاس جو چیز جتنی کم ہو وہ اس کا اتنا ہی زیادہ شور مچاتا ہے“

    آپ کی دانشوری دیکھ کر مجھے اندازہ ہو رہا ہے کہ آپ کے پاس کس چیز کی کمی ہے اور کونسی چیز زیادہ ہے

    لگے رہیں لوٹا جی ۔

    —————-
    LOL
    Cheema Sb.
    By showing your command over Urdu language and correcting him, you have actually made his point.
    :)

  93. saleem raza says:

    زلاان
    جو کمنٹ اپ نے لیکن پروگرام میں پوسٹ کیا ہے ، مھجے صرف یہ بتا دو اُس کمنٹ کی کیا تُک بنتی تھی ، نہ تو اُس میں شیخ رشید ہے اور نہ اس بارے انیکر نے بات کی ہے –
    تو پھر اپ کو کیوں خارش ہوئی ہے ۔

  94. زالان says:

    اسلامی انتہا پسندوں کی کوئی حد نہیں ، ایک انتہا پسند کے پاس اقتدار آتا ہے تو اس سے بڑا انتہاپسند پیدا ہو جاتا ہے
    Tunisia’s Islamist-led government said on Monday it would punish conservative Salafi Muslims who attacked alcohol shops in a central town over the weekend, raising religious tensions in the home of the Arab Spring.

    http://english.alarabiya.net/articles/2012/05/21/215562.html‎

  95. Bawa says:

    ——- بے بنیاد خبروں کے مطابق —-

    بھٹو بہت زہین اور خوددار شخص تھا —- وہ اپنی بیوی کے تعلقات کی وجہ سے نہیں بلکہ اپنی صلاحیتوں کے بل بوتے پر اقتدار کے ایوانوں تک پہنچا تھا

    بھٹو خوشامد سے سخت نفرت کرتا تھا —– اس نے اقتدار کی ہڈی کی خاطر کبھی سکندر مرزا کو خوشامدی خط نہیں لکھا جسمیں اسے قائد اعظم سے بھی بڑا اور عظیم لیڈر قرار نہیں دیا اور نہ ہی کبھی خوشامد میں اس حد تک گیا کہ ایک فیلڈ مارشل کو ڈیڈی کہا

    بھٹو بہت بڑا بلکہ پاکستان کا واحد جمہوری لیڈر تھا —– وہ کبھی ایک ڈکٹیٹر کا چیف پولنگ ائینجٹ نہیں بنا، نہ اس نے مادر ملت کو ہرانے کی غرض سے کسی سیاسی پڑتی میں رقوم تقسیم کیں، ہمیشہ عوام کا فیصلہ تسلیم کیا اور اقتدار اکثریتی پارٹی کو منتقل کرنے کی پر جوش حمایت کی، نہ خود کبھی انتخابات میں دھاندلی کی اور نہ ہی ایسی کسی تحریک کو گولیوں اور ٹینکوں سے دبانے کی کوشش کی جو ڈھاندلیوں کے خلاف اٹھی ہو

    بھٹو نے عوام کو روٹی، کپڑا اور مکان دیا —- نہ کبھی اس نے اور نہ کبھی اسکے وارثوں نے اس ملک کی دولت کو لوٹ کر اپنے گھر بھرے بلکہ اپنی سب دولت عوام کی نذر کر دی

    بھٹو قائد عوام تھا ——- اس نے کبھی کسی پاکستانی کو قتل نہیں کروایا، کبھی پانچ چھے سو لوگوں کو گولیوں سے نہیں بھونا، کبھی اپنے مخالفوں اور انکے اہل خانہ کو قتل نہیں کروایا، کبھی فوج کو عوام پر ٹینک چڑھانے کا حکم نہیں دیا

    بھٹو مارشل لا کا سخت مخالف تھا —– اس نے کبھی اپنا اقتدار بچانے کی خاطر ملک میں جزوی مارشل لا نافذ نہیں کیا، اس نے کبھی کسی فوجی حکمران کو ڈیڈی نہیں کہا، کبھی کسی فوجی آمر کے ساتھ ملکر اقتدار اکثریتی پارٹی کو منتقل کرنے کی راہ میں رکاوٹ نہیں بنے اور نہ ہی کسی فوجی آمر کے ساتھ ساز باز کرکے ملک دو لخت کیا تاکہ اقتدار پکے ہوئے پھل کی طرح اسکی جھولی میں آن پڑے

    بھٹو سیاست میں وراثت کے تصور سے نفرت کرتا تھا —– اس نے پھانسی سے پہلے پارٹی کی قیادت اپنی بیوی اور کو نہیں سونپی تھی

    شاہنواز بھٹو کو ضیاء الحق نے قتل کروایا تھا —– اسے اسکی بیوی نے زہر ہرگز نہیں دیا تھا، نہ اسکی بیوی کی اس سے کوئی لڑائی تھی اور نہ ہی اسکی بیوی نے نصرت بھٹو سمیت پورے خاندان کو دھکے دیکر گھر سے نکالا تھا

    مرتضیٰ بھٹو کو ایجنسیوں نے مروایا تھا —- بینظیر اور زرداری کا اس قتل سے کوئی تعلق نہ تھا اور نہ ہی انکی آپس میں کوئی لڑائی تھی. جب مرتضیٰ بھٹو کی بیٹی نے اپنی وزیر اعظم پھوپھو کو قتل کے بارے میں معلوم کرنے کے لیے فون کیا تو اسکے خاوند اسے بہت ہی شفقت سے پیش آئے. اسے نہ صرف حوصلہ دیا بلکہ اسکی پھوپھو سے بات بھی کروا دی

    بھٹو کی بیٹی بینظیر جمہوریت اور عوامی خدمت پر کامل یقین رکھتی تھی —– اس نے کبھی کسی جرنیل کو اپنے اقتدار کے لیے تمغہ جمہوریت نہیں دیا اور نہ ہی کبھی اپنے خاوند کی خون پسینے کی کمائی لوٹ کر اپنے غیر ملک اکاونٹس بھرے، اس نے ہمیشہ پڑتی میں جمہوری روایت کو جنم دیا اور وصیت کی کہ میرے بعد پارٹی کا سربراہ وہ ہوگا جسے پاڑتی کی اکثرت چاہے گی

    بینظیر بھٹو فوجی حکمرانوں سے سخت نفرت کرتی تھیں —- اس نے کبھی کسی فوجی جرنیل سے کوئی سمجھوتا نہیں کیا

    بینظیر بھٹو عوام کی خدمت کی خاطر وطن واپس لوٹی اور “شہید” ہو گئی —– وہ عوام سے جدا نہیں رہ سکتی تھی اسی لیے اس نے پرویز مشرف سے این آر او لوٹی ہوئی دولت عوام کو لٹانے کی خاطر کیا تھا اور وہ واقعی وطن واپس آ کر عوام کی خدمت چاہتی تھی اور ملک کو مزید لوٹنے اور مزید اپنے غیر ملکی بنک بھرنے کی خبروں میں کوئی صداقت نہیں تھی

    زرداری اپنی صلاحیتوں کی وجہ سے صدر بنے —— اس نے کسی جالی وصیت کی بنا پر پارٹی پر قبضہ نہیں کیا

    زرداری ایک جمہوریت پسند شخص ہے اور عوام کی خدمت کے جذبے سے شرسار ہے —– اس نے ملکی دولت ہرگز نہیں لوٹی ہے. اسکے ہاتھ صاف ہیں اور وہ کسی تفتیس اور کسی عدالت سے خائف نہیں ہے

    عوام کو چاہئیے کہ وہ بے بنیاد خبروں پر بھروسہ نہ کیا کریں بلکہ انہی باتوں پر یقین کیا کریں جو بھٹو کے پجاری اور مہا پجاری کرتے ہیں

    😀 😀 😀
    :mrgreen: :mrgreen: :mrgreen:

  96. saleem raza says:

    باوا جی السلام وعلیکم
    اگر یہ سب باتیں دُرست تو پھر تو شیخ جی کوئی انعام شام ملنا چاہیے کیونکہ انہوں نے
    پھر سچ مچ کا سیاپا پایا ہوا ہے –
    بات تو ہماری سھجھ وچ نہیں گھُس رہی تھی کہ بھٹو کتنا بلند شخص تھا –

  97. Javed Ikram Sheikh says:

    A letter from Mr. Ali Mazhar:

    Want to study in U.K
    Want to work in USA or UAE
    Want to live in Canada
    Want to die in Makkah
    Want to be burried in Madina
    Want to speak in English
    Want to Eat Chinese rice,
    Italian Pizza and Russian Salad
    Want to use Japanese electronics
    Want to spend vaccations in Europe.
    Want to watch English Movies
    Want to listen Indian Music
    So
    Where is Pakistan.,?
    And
    Who is Pakistani.,
    Then above all want a Leader to be Pure PAKISTANI….,!!

  98. saleem raza says:

    شیخ جی
    اپکو پاکستان سے اتنی محبت ہے تو پھر اپ نے کیوں پانی وچ معدانی ڈالی ہوئی ہے ،
    اور اپنی صحت کے پھچے ہاتھ دھو کر پڑے ہوے ہیں۔
    اپ اپنا خیال رکھیں کیوں سب کو روتا چھوڑ کر اکیلے ہی جنت کو روانہ ہونے پر تُلے ہوے ہیں ،

  99. saleem raza says:

    چمیہ جی
    لوٹا جی جان بوجھ کر اردو لکھنے میں غلطی کرتے ہیں تاکہ پڑھنے والا اُس کو
    بار بار پڑھے کیونکہ بار بار پڑھنے میں برکت ہوتی ہے -اور سمجھ وی چنگی اتی ہے –

  100. Bawa says:

    saleem raza said:
    باوا جی السلام وعلیکم
    اگر یہ سب باتیں دُرست تو پھر تو شیخ جی کوئی انعام شام ملنا چاہیے کیونکہ انہوں نے
    پھر سچ مچ کا سیاپا پایا ہوا ہے –
    بات تو ہماری سھجھ وچ نہیں گھُس رہی تھی کہ بھٹو کتنا بلند شخص تھا –

    .
    .
    و علیکم السلام رضا بھائی

    بھٹو واقعی بہت بلند شخص تھا. ضیاء الحق ہے گردن چھے فٹ لمبی کرکے اور بلند کر دیا تھا

    :) :)

    جہاں تک انعام کی بات ہے تو انعام میں پجاریوں کو حکومت تو دے دی ہے. اب اور کیا دیں؟

    لوٹ کی قوم کی دولت ساری – اگلی باری پھر زرداری

  101. Javed Ikram Sheikh says:

    Saleem raza Sahib,

    آپ نے جو مشورہ دیا ہے —یا تو میں سمجھ نہیں سکا-
    یا آپ ٹھیک طرح سے سمجھا نہیں سکے—
    یا پھر بھولے لال قلندر —کا فلسفہ ھے——-
    اب اس میں میری صحت کا ذکر کہاں سے آ گیا —
    میں جو کچھ کر رہا ہوں— نہ صرف میری بلکہ
    آپ کی صحت کے لئے بہت ضروری ھے—-
    گھر کو ہر قسم کے کاکروچز سے صاف کرنا
    بچوں کی صحت کے لئے بھی لازمی ھوتا ھے —-

  102. SCheema says:

    Zia M said:
    آپ نے بلکل صیحیح فرمایا ہے کہ
    “جس کے پاس جو چیز جتنی کم ہو وہ اس کا اتنا ہی زیادہ شور مچاتا ہے“

    آپ کی دانشوری دیکھ کر مجھے اندازہ ہو رہا ہے کہ آپ کے پاس کس چیز کی کمی ہے اور کونسی چیز زیادہ ہے

    لگے رہیں لوٹا جی ۔

    —————-
    LOL
    Cheema Sb.
    By showing your command over Urdu language and correcting him, you have actually made his point.
    ———————–
    ضیاء صاحب ۔

    اب ایسا بھی نہیں میں ہمیشہ اپنے آپ کو کم علم ہی سمجھتا ہوں ۔ اور ہوں بھی ۔ ویسے یہ ہمارے لوٹا جی اکیلے نہیں ہیں لوگوں کو لکھنا آئے نہ آئے لکھتے ضرور ہیں ۔

    بلکل ایسے ہی جیسے مرغی کو انڈہ آیا ہوا ہو تو وہ جگہ ڈھونڈتی پھرتی ہے انڈہ دینے کے لئے ۔ بلکل ایسے ہی ادھر بات ذہن میں آئی ادھر کر دی ۔ بیشک بات کرنی آئے نہ آئے ۔

    پنجابی میں کہتے ہیں
    “اینوں ڈھاڈھی آئی اے ۔ اے ہن کرے گا ۔ کر لین دیو سُو“

    [img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img][img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img]

  103. SCheema says:

    saleem raza said:
    چمیہ جی
    لوٹا جی جان بوجھ کر اردو لکھنے میں غلطی کرتے ہیں تاکہ پڑھنے والا اُس کو
    بار بار پڑھے کیونکہ بار بار پڑھنے میں برکت ہوتی ہے -اور سمجھ وی چنگی اتی ہے
    ———————————–
    سلیم صاحب پھر تو غلطی ہو گئی ۔ چلیں کوئی بات نہیں عبارت تو موجود ہے ناں ۔ برکت کے لئے بار بار پڑھتے ہیں ۔

    ویسے مس برکتِ جبیں مل جائے گی ۔

    [img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img][img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img]

  104. SCheema says:

    Bawa said:
    ——- بے بنیاد خبروں کے مطابق —-

    عوام کو چاہئیے کہ وہ بے بنیاد خبروں پر بھروسہ نہ کیا کریں بلکہ انہی باتوں پر یقین کیا کریں جو بھٹو کے پجاری اور مہا پجاری کرتے ہیں
    ———————
    ماشاء اللہ ۔

    باوا جی اتنی عقیدت ۔
    ہمارے ایک دوست کے والد صاحب کے پاس ایک بزرگ آتے تھے (ویلے) گھنٹوں بیٹھے رہتے تھے جیسے یہاں پر کچھ بزرگ نیٹ پر گھنٹوں بیٹھے رہتے ہیں ۔
    ایک دن ہم نے انکل سے پوچھا کہ بزرگ کہتے کیا ہیں ۔ کہنے لگے کہ ان کو یہ غم کھائے جا رہا ہے کہ

    “بھٹو کو پیغمبری کیوں نہیں ملی“

    [img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img][img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img]

  105. saleem raza says:

    SCheema said:
    Bawa said:
    ——-
    ایک دن ہم نے انکل سے پوچھا کہ بزرگ کہتے کیا ہیں ۔ کہنے لگے کہ ان کو یہ غم کھائے جا رہا ہے کہ

    “بھٹو کو پیغمبری کیوں نہیں ملی“–
    —-
    Good one
    😀

  106. saleem raza says:

    SCheema said:
    saleem raza said:
    چمیہ جی
    لوٹا جی جان بوجھ کر اردو لکھنے میں غلطی کرتے ہیں تاکہ پڑھنے والا اُس کو
    بار بار پڑھے کیونکہ بار بار پڑھنے میں برکت ہوتی ہے -اور سمجھ وی چنگی اتی ہے
    ———————————–
    سلیم صاحب پھر تو غلطی ہو گئی ۔ چلیں کوئی بات نہیں عبارت تو موجود ہے ناں ۔ برکت کے لئے بار بار پڑھتے ہیں ۔

    ویسے مس برکتِ جبیں مل جائے گی ۔
    —-
    چمیہ جی اپ مس برکت کے ملنے کی بات کرتے ہیں –
    یہاں پر تو برکت خود اپکو ملنے کے لیے بے چین ہے اپ ملنے والے تو بنو سوہنو-

  107. Javed Ikram Sheikh says:

    It is very sad to learn that no one talks about Khilafat —anymore.

    Even the Champion for the Restoration of Khilafat—-have been lost.
    Debate and discussion at the Internet Opinion Forums—–is out of excitement.

    We understand that Khilafat is not going to be restored—–but the desire for the
    restoration of Khilafat—should continue.

  108. Javed Ikram Sheikh says:

    1. Internet is exposing the real face of Orthodox Allusions.
    2. Each Mythology is —-dropping down —one by one.
    3. Reality about most of HARAMS is being proved illogical.

  109. saleem raza says:

    میڈیا کی توجہ ہٹانے کے حکومت نے کراچی میں جان بوجھ کر قتلِ غارت کروائی ہے کیونکہ
    جس طرح امریکہ میں بھولے لال قلندر اور کمپنی کو لتر پولہ ہوا ہے – یہ بھولا لال قلندر نہیں
    چاہتا کہ میڈیا ،پُڑ پُڑ کرتا رہے،

  110. Bawa says:

    saleem raza said:
    میڈیا کی توجہ ہٹانے کے حکومت نے کراچی میں جان بوجھ کر قتلِ غارت کروائی ہے کیونکہ
    جس طرح امریکہ میں بھولے لال قلندر اور کمپنی کو لتر پولہ ہوا ہے – یہ بھولا لال قلندر نہیں
    چاہتا کہ میڈیا ،پُڑ پُڑ کرتا رہے،

    رضا بھائی

    بھولے لال قلندر اور کمپنی کا امریکہ میں ہی لتر پولا نہیں ہوا ہے بلکہ یہاں پاکستان سے بھی فوجیوں نے لتر پولا کرکے امریکہ بھیجا تھا اور کان مروڑ کر کہا تھا کہ اگر کوئی بات ہڈی کی لالچ میں ہماری مرضی کے خلاف کرکے آئے تو منہ کالا کرکے دوبئی بھیج دیا جائے گا

    ملکی اور غیر ملکی اسٹبلشمنٹ کی دلالی میں ایسے ہی منہ کالا ہوتا ہے

    😀 😀 😀
    :mrgreen: :mrgreen: :mrgreen:

  111. saleem raza says:

    باوا جی
    اس کا مطلب ہوا کہ اب بھولےلال قلندر نے سو پیاز تو پاکستان میں کھا لیے تھے لیکن امریکہ والوں نے بھولے لال قلندر کو جوتے بقلم خود حاضر ہو کر کھانے کو کہا ہے –
    اور اُس کو دیکھیں کھرِ صاحبہ کو جس کے خاوند نے سات کروڑ بجلی والوں کو دینے ہیں
    اور یہ ادھر لشل پش گھوم رہی ہے
    اب باوا جی یہ لال قلندر تو ادھر کے نہ رہے نہ اُدھر کے
    اب یہ لتر کھا کر واپس کس منہ سے اہیں گے

  112. aliimran says:

    چیمہ صاحب
    یہ آج کا لطیفہ نہیں—– آج کی حقیقت ہے جو آپ نے نے لکھی ہے
    ان مردودوں پر خدا کی لعنت ہو

  113. Bawa says:

    لتر پولا
    .
    .
    مہاجر صوبہ لبریشن آرمی کی جانب سے اراکین سندھ اسمبلی کو لکھا جانے والا خط
    .
    .
    [img]http://bilaunwan.com/wp-content/uploads/2012/05/mohajir-letter.jpg[/img]
    .
    .
    جواب لتر پولا
    .
    .
    [img]http://bilaunwan.com/wp-content/uploads/2012/05/mahajir-soba-reply.jpg[/img]

    😀 😀 😀
    😀 😀 😀

  114. Javed Ikram Sheikh says:

    For the last over four years—a brainwashed —single band mentality—and blackmailing media —– has been -performing a Qawali against Zardari——

    Just mere waste of time——without any solution—–without any outcome—-

    I can bet—–the next phase —— if Zardari —-and —existing Government has been replaced by any other Government——–in the next Elections— Pakistanis—could be —- in more -more depressing—frustrating—-situation.

    A country—-with rapidly growing population—mostly illiterate——and with shrinking resources—— NOW—-cannot be —governed—by 100 Imran Khans–100 Nawaz Sharifs—100 Altaf Hussains—-100 Military Generals———-
    Because—-
    Pakistan is like a Lemon Automobile—-having a —manufacturer defect.

  115. saleem raza says:

    hasankhan said:
    KUTEY BHONKTEY REHTEY HAIN ,HATHI CHALTA REHTA HE————-AIK ZERDARI SAB PER BHARI
    —————

    میرا چن ماھی اور کاکا شپائی اپ نے زرداری کو ہاتھی کہا ہے اب مُکر نہ جانا کیونکہ ہم
    تو روز ازل سے کہہ رہے ہیں اس ہاتھی کو مار کے سوا لاکھ کا کریں –

  116. SCheema says:

    saleem raza said:

    میرا چن ماھی اور کاکا شپائی اپ نے زرداری کو ہاتھی کہا ہے اب مُکر نہ جانا کیونکہ ہم
    تو روز ازل سے کہہ رہے ہیں اس ہاتھی کو مار کے سوا لاکھ کا کریں –
    ———————————
    سلیم صاحب آپ کو غلط فہمی ہوئی ہے ۔
    زرداری کے لئے صرف ایک ہی لفظ استعمال ہوا ہے اور اس شدت سے استعمال ہوا ہے کہ اس کے اپنے لوگ بھی اب اس کے لئے یہی الفاظ استعمال کرتے ہیں

    http://www.youtube.com/watch?v=0CjaC3tjumc

    اوپر بھی یہی لفظ زرداری کے لئے ہی استعمال کیا گیا ہے ۔

    [img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img][img]http://pkpolitics.com/wp-includes/images/smilies/icon_biggrin.gif[/img]

  117. پاکستانی سیاستدان says:

    یااللہ کراچی کو ایک اور نصیر اللہ بابر دے دے جو ان دہشت گردوں کو ان کی اصل اوقات یاد دلادے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔آمین

  118. پاکستانی سیاستدان says:

    @Bawa

    باوا جی خدا کرے یہ مہاجر صوبے والا معاملہ دب جائے ورنہ بہت خون خرابہ ہوگا۔۔۔۔۔اللہ پاکستان اور تمام پاکستانیوں کی حفاظت فرمائے۔۔۔۔۔۔۔آمین

  119. saleem raza says:

    SCheema said:
    saleem raza said:

    میرا چن ماھی اور کاکا شپائی اپ نے زرداری کو ہاتھی کہا ہے اب مُکر نہ جانا کیونکہ ہم
    تو روز ازل سے کہہ رہے ہیں اس ہاتھی کو مار کے سوا لاکھ کا کریں –
    ———————————
    سلیم صاحب آپ کو غلط فہمی ہوئی ہے ۔
    زرداری کے لئے صرف ایک ہی لفظ استعمال ہوا ہے اور اس شدت سے استعمال ہوا ہے کہ اس کے اپنے لوگ بھی اب اس کے لئے یہی الفاظ استعمال کرتے ہیں

    http://www.youtube.com/watch?v=0CjaC3tjumc

    اوپر بھی یہی لفظ زرداری کے لئے ہی استعمال کیا گیا ہے ۔

    ——————————————-

    چمیہ جی

    کتا بڑا بے نظیر جانور ہے -کتے کے علاوہ کوئی جاندار پیٹ بھرنے کے بعد اپنے پالنے والا کا شکریہ ادا نہیں کرتا -غور کریں چمیہ جی تو دُم دار جانوروں میں کتا انتہا ایساجانور ہے -جو اپنی دُم بطور آلہ اظہار خلوص وخوشنودی استعمال کرتا ہے -ورنہ باقی گنوارجانور تو – اپ زیادہ دورُ کیوں جاہیں اس ہاتھی کو ہی لے لیں یہ تو اپنی پونچھ سے صرف سے مکھیاں ہی اڑا سکتا ہے – اور کتا پاگل بھی ہو جاے تو بھی اپنے مالک کو نہیں کاٹتا – اس میں کچھ بد چلن کتوں کو چھوڑ کر – اور خیر سے ہاتھی بد مست ہو کر اپنے مالک کو مارا ڈالتا ہے –
    اور اس لیے میں نے اوپر زرداری کو ہاتھی لکھ کر کتے کی عزت بچا لی تھی –

  120. Javed Ikram Sheikh says:

    تو مجھ سے بار بار پوچھتا ھے ——آخر شان قلندری کیا ھے ؟؟؟؟
    شان قلندری کا مشاہدہ کرنا ھے —-
    تو پاکستان میں آ ——
    گیسوے تابدار کی مشک آفرینی —–
    گلیوں، کوچوں بازاروں میں گل لالہ کی فراوانی–
    بحر ظلمات میں دوڑنے والے گھوڑوں کی —موج—اور مستی—-
    گفتار ، تکرار اور کردار کے غازیوں کی –گل افشانی —-
    جذبہ عشق و محبت سے مخمور —دیوانوں کی چاک گریبانی —
    سب —-قلندر کی کرامات ہیں ——

  121. zalaan says:

    پاکستانی سیاستدان said:

    یااللہ کراچی کو ایک اور نصیر اللہ بابر دے دے جو ان دہشت گردوں کو ان کی اصل اوقات یاد دلادے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔آمین

    ——————————————-

    بس وزیرستان میں ڈرون حملے نہیں ہوں اور ساری دنیا میں جہاد ہو ،دوسرے صوبوں پر اپنے ٹیکا ہو پنجاب میں امن اور خوشالی ہو

  122. zalaan says:

    بلوچ قوم پرست جو بلوچستان میں پنجابیوں کو مار رہیا ہیں وہ ہمارے بھائی ہیں اور ان سے بات چیت کی جائے ،سوات میں گلے کاٹنے والوں کے خلاف آپریشن نا جائز پر کراچی میں آپریشن کیا جائے

  123. zalaan says:

    جہاد کرے اور مرے پٹھان ، جہادی کا پتا بتا کر جیل جائے تو پٹھان ، اور پنجابی طالبان اینکرز اور جنرلز میڈیا پر بیٹھے جہاد کے نعرے لگائیں

  124. EasyGo says:

    عوام کے پاس جائيں گے، ان کا حق ہے قبول کريں يا مسترد، وزيراعظم
    جنگ
    =======
    عجیب بات ہے جاوید شیخ صاحب عوام کو جاہل،ساری برائیوں کی جڑ قرار دیتے ہیں
    دوسری طرف پی پی والے صرف اسی عوام کی رایے کو مستند مانتے ہیں
    سچ کیا ہے جھوٹ کیا ہے
    دھوکہ کیا ہے اور کون کس کو دے رہا ہے

  125. EasyGo says:

    یہ وہ ملک ہے جس نے قائد اعظم محمد علی جناح‘ لیاقت علی خان‘ حسین شہید سہروردی‘ سردار عبدالرب نشتر‘ مولانابھاشانی‘ شیخ مجیب الرحمن‘ خان عبدالغفار خان‘ قاضی عیسیٰ‘ عبدالصمد اچکزئی‘ سردار غوث بخش بزنجو‘ نواب اکبر بگتی‘ ذوالفقار علی بھٹو اور بینظیر شہید جیسے عظیم رہنما پیدا کئے۔شاید ہم اس قابل ہی نہیں تھے کہ ان لیڈروں کی عظمتوں سے فائدہ اٹھا سکتے۔ اب توموجودہ سیاسی قیادت ہی ہمارامقدر ہے۔ ہمارابھی کیا مقدرہے؟

    ہمارابھی کیا مقدرہے؟…سویرے سویرے…نذیر ناجی

    ===========

    اگر مشرف کے ہاتھوں میاں صاحب پھانسی چڑھ چکے ہوتے تو یقیناً اس لسٹ میں انکا بھی نام ہوتا
    ہمارے تو گزرے ہوؤں کی عظمت ہر وقت سولی پر لٹکتی ہے، تو کسی زندہ کو کون تعظیم دے گا

  126. Javed Ikram Sheikh says:

    I am not slave to any political party or religious group.
    I trust upon my personal conclusion and opinion.

    According to my observation, people of Pakistan are equally responsible for most of social, cultural and ethical problems.
    The tradition to criticize Government and only Government for all issues is ridiculous.

    PAKISTAN, YET, IS NOT A COMMUNIST STATE.

    One should acknowledge that an overall impression of Pakistan and its population has been shaped into a very negative ground reality.

    Only 15-20 % individuals, who sincerely contribute for progress and prosperity, deserve appreciation.

  127. پاکستانی سیاستدان says:

    @zalaan

    سیکولر فورسز جنہوں نے کراچی میں دہشت گردی کا بازار گرم کر رکھا ہے ان کے خلاف بھی کبھی کچھہ بول دیا کریں۔ کیا کراچی میں روزانہ مرنے والے انسان نہیں ہیں؟ کیا کراچی کے عوام نے ایم کیو ایم، اے این پی اور پیپلز پارٹی کو اس لئے ووٹ دیا تھا کہ وہ وہاں کراچی کے عوام کا قتل عام کرتے رہیں؟

    کراچی کی صورتحال بلوچستان، خیبر پختنخواہ، فاٹا، افغانستان اور عراق سے زیادہ خراب ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اگر کراچی کو نصیراللہ بابر جیسے شیر کے حوالے نہ کیا گیا تو یہ سیکولر دہشت گرد ملک توڑنے سے گریز نہیں کریں گے۔

Leave a Reply