November 12, 2012

Apologies for inconvenience, the video is scheduled to be restored and will be restored between 2 and 8 weeks. Please contact admin @ pkpolitics dot com if you want this video earlier.

Shahi Syed, Arbab Ghulam Rahim and others in Today’s episode of Islamabad Tonight with Nadeem Malik.

8 Comments

  1. danishwar says:

    جب بھی کراچی کے حالات خراب ہوتے ہیں غیر ملکی ہاتھ کا بہانہ کا جاتا ہے پہلی بات تو یہ ہے کہ غیر ملکی ہاتھ کا نام بتایا جائے دوسری بات یہ ہے کہ غیر ملکی ہاتھ ملوث بھی ہے تو مارنے اور مرنے والے تو پاکستانی ہی ہیں اور زیادہ تر ہماری اپنی ہی سیاسی اور مزہبی جماعتیں ایک دوسرے کو مار رہی ہیں تو س کا مطلب تو یہ ہوا کہ ہماری سیاسی اور مزہبی جماعتیں ملک دشمنوں کے ہاتھ میں کھیل رہی ہیں

  2. nashter says:

    No country in the world is the victim of as much conspiracies as Pakistan. Both internal and external forces are doing their best to harm it. Pakistan will prevail against all evils Insha Allah.

  3. badesaba says:

    danishwar said:
    جب بھی کراچی کے حالات خراب ہوتے ہیں غیر ملکی ہاتھ کا بہانہ کا جاتا ہے پہلی بات تو یہ ہے کہ غیر ملکی ہاتھ کا نام بتایا جائے دوسری بات یہ ہے کہ غیر ملکی ہاتھ ملوث بھی ہے تو مارنے اور مرنے والے تو پاکستانی ہی ہیں اور زیادہ تر ہماری اپنی ہی سیاسی اور مزہبی جماعتیں ایک دوسرے کو مار رہی ہیں تو س کا مطلب تو یہ ہوا کہ ہماری سیاسی اور مزہبی جماعتیں ملک دشمنوں کے ہاتھ میں کھیل رہی ہیں

    Well said. Yes it is correct that our religious and political parties are playing in the hands of the enemies.

  4. cuckoomalik says:

    izatmaab said:
    It is so hard to watch crying people for their loved ones on TV every day. It seems that we do not have any government in the country.

    Our president and PM are watching it for last five years.

  5. shokatali says:

    jiwaypakistan said:
    mazloomlog said:
    One thing is for sure that someone rings the bell to step up blood shedding in Karachi.

    That is MQM.

    سب سے دلچسپ بات یہ ہے کہ ایم کیو ایم خود ہی کراچی کے حالات خراب کر کے جس طرح ان پر واویلا کرتی ہے وہ سب سے زیادہ مکاری کی بات ہے

Leave a Reply