6 Comments

  • tahirmalik November 16, 2012 6:18 am

    مولا بخش چانڈیو کے پاس بس ایک ہی بات تھی کہ مشرف دور میں بھی دوہرا بلدیاتی نظام چل رہا تھا بھائی ایک طرف تو آپ خود کو جمہوریت کے چمپین کہتے ہو اور مشرف دور کی ہر چیز کو غلط کہتے ہو اور دوسری طرف اسیکے دور کی مثال بھی پیش کرتے ہو شرم تم کو مگر نہیں آتی

  • ghufrankhan November 16, 2012 6:35 am

    Sindh is clearly divided because of the new local body law. PPPP has this misconception that because it is the most popular party of interior Sindh so it can do whatever it like.

  • nashter November 16, 2012 11:55 am

    Kashmala Tariq is repeating her point of view that Karachi situation is a effort to delay the elections. I think it should be dug out if there is some reality behind it.

  • badesaba November 16, 2012 12:00 pm

    پیپلز پارٹی و ہر بات پر مظلومیت کا رونا اب بند کر دینا چاہئیے پنچ سال حکومت میں رہ کر کچھ نہیں کیا انہیں قوم سے معافی مانگنی چاہئیے

  • mohibewatan November 16, 2012 2:42 pm

    nashter said:
    Kashmala Tariq is repeating her point of view that Karachi situation is a effort to delay the elections. I think it should be dug out if there is some reality behind it.

    We can expect any thing from Zardari and party.

  • zaii November 16, 2012 2:44 pm

    مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ صدر کا عہدہ غیر سیاسی نہیں ہے درست ہے لیکن غیر جماعتی ضرور ہے صدر صرف پیپلز پارٹی کا نہیں ہے دوسری جماعتوں کا بھی ہے وہ ایک پارٹی کے حق میں اور ایک کے خلاف بیان نہیں دے سکتا

Add Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *