March 20, 2013
Imran Khan PTI

Imran Khan was elected as chairperson of Pakistan Tehreek-e-Insaf (PTI) unopposed as no one filed papers against him.


Imran selected chairman unopposed by exposetube

42 Comments

  1. Bawa says:


    امریکہ سے لڑ نہیں سکتا – عمران خان

    [img]http://e.jang.com.pk/03-23-2013/pindi/images/639.gif[/img]

    اگر امریکہ سے لڑ نہیں سکتا تھا تو ڈرون حملوں کے خلاف دھرنہ کیوں دیا تھا؟

    اگر امریکہ سے لڑ نہیں سکتا تھا تو امریکہ سے پنگا کیوں لیا تھا؟

  2. Bawa says:

    [img]http://www.nation.com.pk/assets/thenation/images/client/thenation_resize.jpg[/img]


    PTI polls go ‘below the belt’

    By: Jawad R Awan | March 22, 2013

    [img]http://www.nation.com.pk/print_images/480/2013-03-22/pti-polls-go-below-the-belt-1363897705-1942.jpg[/img]

    LAHORE – The rivalry between two PTI groups has reached a point of ‘no-return’ on Thursday as Umer Sarfraz Cheema on polling day moved the party’s election commission to declare presidential candidate Javed Hashmi as ineligible over Mehran Bank scam.

    The party leaders said that Umer Sarfraz Cheema who was running for party’s central president office is backed by the Unity Group while Javed Hashmi enjoys the support of the Ideological Group.

    The PTI election commission sources told this correspondent that the election authorities keeping in view the timing of the objection petition rejected it, while party leadership might take disciplinary action against Cheema for allegedly leaking the petition details to media. The sources informed that Cheema had taken the plea that Hashmi was allegedly involved in Mehran Bank scam and could not run for any party office, while the second plea was that he bears poor physical and mental health and was not fit for holding any party office.

    They added that the Munaza Hassan, who contested party polls for PTI central president (women wing) filed an objection petition against Fauzia Kasuri declaring her ineligible to run for the women wing president due to her dual nationality but Munaza filed the petition on the last day of filing of nomination papers.

    Therefore, the election commission suspected mischief in the objection petition of Cheema and keeping in view its timing rejected his plea to bar Hashmi from party polls.

    Meanwhile, close aides of Umer Cheema alleging the party’s election commission for supporting the Ideological group claimed that they would move to the court if Hashmi was not disqualified on the basis of Cheema’s plea. They maintained that election commission could not set aside their plea without a proper inquiry, while there was no issue of the timing as any party member candidate running for the party office can file an objection petition at anytime, which may be the polling day.

    Ijaz Chaudhary, PTI president Punjab commenting over the issue said, “It brought a bad taste on the polling day held for the PTI final chapter intra-party polls”.

    He said, “The issue should not reach the media till a decision by the election commission and disciplinary action can be initiated against Umer Cheema if he released the news to the newsmen”.

  3. Jugan Kazim says:

    Imran Khan, being lifetime Chairman of PTI since 1995 is not either!! By announcing to stick on for yet another 2 terms after last 17years, Imran Khan-Chairman PTI (Pakistan Tehrik-e-Insaf) breaks the record of Asghar Khan another Chairman of PTI (Pakistan Tehrik-e-Istaqlal)…. Vice Chairman will always be Makhdoom Shah Mahmood Qureshi, since it was a pre-condition on the basis of which he jumped into PTI in Nov’11….. Similarly, another Makhdoom, Makhdoom Javed Hashmi will always stay as President PTI ever since he joined PTI in Dec’11…. While timber-mafia Azam Swati always remains as Senior Vice President of PTI. PTI calls it elections …. pls give us a break!

  4. A L i Ch says:

    اربوں روپے خرچ کرنے کے بعد ایسا جلسہ ہوتا ہے ؟
    تیس اکتوبر کے جلسے پر بھی اربوں روپے خرچ ہووے تھے لیکن وہ پیسا پاشا صاحب اور ملک ریاض کا تھا
    آج کے جلسے میں پیسا فنڈز کا تھا جو میرے خیال سے ختم ہو گیا ہے
    اب کیا ہو گا ؟
    میں پوری تسلی سے یہ بات کر رہا ہوں کہ آیندہ جلسوں میں خان صاحب کی ضمانت الیکشن سے پہلے ہی ضبط ہو جائے گی
    کیونکہ اتنا پیسا خرچ کرنا کوئی خالہ جی کا گھر نہیں
    ذرا سوچئے

  5. A L i Ch says:

    دیکھو دوستوں، ایک بات پلے باندھ لو، آوارہ کوتوں کا غول شیر کا شکار نہیں کر سکتا، بے کار کی مشقت کا کیا فائدہ..

    [img]http://sphotos-b.ak.fbcdn.net/hphotos-ak-ash3/521511_508577385871510_1395273318_n.jpg[/img]

  6. A L i Ch says:

    دیکھو دوستوں، ایک بات پلے باندھ لو، آوارہ کوتوں کا غول شیر کا شکار نہیں کر سکتا، بے کار کی مشقت کا کیا فائدہ..

    [img]http://sphotos-b.ak.fbcdn.net/hphotos-ak-ash3/521511_508577385871510_1395273318_n.jpg[/img]

  7. A L i Ch says:

    یہ بارش ابر رحمت ہے : عمران خان

    اور یہ کہہ کر عمران خان اپنے ساتھیوں سمیت سٹیج سے غایب

    ہاہاہاہاہاہاہا سونامی تو نہیں آی الله کا قہر آ گیا

  8. Bawa says:

    پاکتان کا پہلا خیالی وزیر اعظم اقتدار میں آنے کے خواب دیکھ رہا ہے

    اس پھدو کو یہ نہیں پتہ کہ اقتدار میں آنے کے لیے ایک نہیں ایک سو بیس ایم این ایز کی ضرورت ہوتی ہے

    یہ سمجھتا ہے کہ جو جلسے میں ایک لاکھ بندہ اکٹھا کر لیتا ہے وہ وزیر اعظم بن جاتا ہے

    مجرا، گانا بجانا، جلسے جلوس اور میلوں تھیلوں میں تو ہر کوئی چلا آتا ہے

    اگر جلسے جلوسوں سے وزیر اعظم بنتا ہوتا تو آج چالیس لاکھ کے دھرنے کا دعوا کرنے والا بابا چابی والا ذلیل و خوار ہو کر دھکے نہ کھا رہا ہوتا

    بقول عاصمہ جہانگیر

    ہم نے اس ملک کی تاریخ میں بہت بڑے بڑے جلسے جلوس دیکھے ہیں لیکن جب انکے ڈبّے کھلتے ہیں تو سب خالی ہوتے ہیں

  9. ایم کے صدیقی says:

    پیرو مرشد

    آداب اور سلام ، امید ہے مزاج بخیر ہونگے ، پی کے پالٹیکس کے نۓ ورژن نے تو موج کروادی ہے ، بہت اچھا لگ رہا ہے واپس فورم پر آ کر .. امید ہے آپ ٹھیک ہونگے ..

    • Bawa says:

      و علیکم السلام صدیقی بھائی

      دیکھ لیں، نئے ورژن سے فرنٹ فورم نئی نویلی دلہن کی طرح نکھر گیا ہے

      اب تو اڈمن جی سے آنکھ بچا کر جہاں جی چاہے لچ تلیں

      :) :)

  10. ایم کے صدیقی says:

    علی بھائی

    سلام اور آداب

    آج بڑے عرصے کے بعد فورم پر آنے کا موقع ملا ہے امید ہے آپ ٹھیک ہونگے ..

    ذرا یہ تو پتا کریں کہ آج احمق اعظم کے جلسے میں کتنے لوگ تھے .. سنا ہے کوئی پچاس ہزار سے زیادہ نہیں تھے …؟

  11. Prof.Amil Dhamakey Shah says:

    او ساڈا ببر شیر شہزادہ
    صدیقی بھائی آیا۔۔۔
    صدیقی بھائی علی بھائی باوا جی
    اسلام و علیکم

    علی بھائی یہ آوارہ کتوں کا غول اس بار شیر سے
    زبردست پیھنٹی کھاے گا

  12. Deevav says:

    @
    Siddiqui sb

    Who cares how many were there in the Jalsa? We are focused towards elections and Insha Allah PMLN alone will defeat all these munafiqeen single handedly with Allah’ s Help. I know only one thing and that is Punjabis and the nation in general is not fool to vote for PTI when they know that he is being used as a splinter bomb to divide Punjab vote by zardari.

    Each that is casted for PTI would be for zardari because only this way hopes to,get few seats from Punjab where he enforced 12 to 16 hours loadshedding and destroyed Faisalabad’ s cottage and cotton industry. We simply cannot afford this mistake. Besides the performance of Mian Sb in Punjab has given confidence to the entire Pakistani awam that they can deliver. Metro bus service is a gift of PMLN for Punjab and Nawaz Sharif has promised underground train for Karachi. Wow. Lets join hands and wow to defeat every attempt that is made by enemies of Pakistan to highjack Punjab vote bank Insha Allah. SHER pe Moher Lagaen aur apny zindagi sawaren.
    IK could not to do justice to his wife and illegitimate daughter and her mother. How can one expect him to do justice towards common people of pakistan?

  13. A L i Ch says:

    اسلام علیکم صدیقی بھائی جی ویلکم بیک
    اسلام علیکم پروفیسر بھائی جی
    اپ بھائیوں کی دعا سے سب اچھا ہے
    اپ سنائیں سب خریت ہے نا
    پروفیسر بھائی جی ان آوارہ کتوں کی آمد میں کمی واقعی نہیں ہو رہی ایک کو کچلا کھلاؤ دوسرا تیار ہو جاتا ہے
    اب ایک اور آوارہ بگھوڑا آ گیا ہے

    :D :D :D

  14. Bawa says:

    سب دوستوں کی خدمت میں سلام

    اور

    پروفیسر جی کو و علیکم السلام اور خوش آمدید

    اب پانی پت کا میدان اور انقلابیوں کا قبرستان فرنٹ فورم ہی بنے گا

    :mrgreen: :mrgreen: :mrgreen:

  15. A L i Ch says:

    بہوت شکریہ ایڈمن صاحب
    ہم بھی کافی عرصے سے کڑکی لگا کر بیٹھے تھے آخر کار چوہا مل گیا
    بلی کے مزے ہی مزے

    :D :D :D

  16. sheedapistol says:

    Bawa Jee…. Are you a full time employee for this website.. or work for PMLN, As I never found you offline..

    Do u have anything else to do in this world… or just here for critisize.. PTI

    Not much I can writedown for u … becuase u mean nothing for PTI.

    • Bawa says:

      شیدا پستول جی

      اگر آپکی نظر میں میں پی ٹی آئی کے لیے کچھ بھی نہیں ہوں تو پھر میرے کومنٹس پڑھکر انقلابیوں کے ہاتھ پاؤں کیوں پھول جاتے ہیں اور کانوں سے دھواں کیوں نکلنے لگتا ہے؟

      ایک انقلابی نے تو آتے ہی باقائدگی سے گالیاں بکنا شروع کر دی ہیں جسے اڈمن جی نے مٹا دیا ہے

      اگر واقعی آپ کا انقلاب اور سونامہ میرے ان بے حیثیت کومنٹس کی وجہ سے خطرے میں نہیں ہے تو پھر آپکو بھی یہ کومنٹس لکھنے اور لمبے چوڑے سوالات پوچھنے کی ضرورت کیوں پیش آ گئی ہے؟

      پسینہ پونجھ لیجیے – میں واقعی کسی گالیوں والے انقلاب کی راہ میں رکاوٹ نہیں ہوں

      مجھے بخوبی علم ہے کہ الیکشن سے پہلے انقلابی مجھے گالیاں بکیں گے اور انتخابات کے نتائج سامنے آنے کے بعد پوری پاکستانی قوم کو

      اس کے علاوہ بے چاری ممی ڈیڈی انقلابی کر بھی کیا سکتے ہیں؟؟؟؟؟ کیونکہ قوم نے انکا انٹرنیٹ پر انتخابنات کروانے کا مطالبہ مسترد کرکے انہیں سخت گرمی میں خراب ہونے اور انتخاب لڑنے پر مجبور کر دیا ہے

      :wink: :wink:

  17. sheedapistol says:

    I think this website need a full time joker like you to keep posted…..and also provide some fun to viewers…

    You know what I would nominate you a Chokidar

    Good Luck…

    and I am hopeing you will get back to me…

    • Bawa says:

      بہت شکریہ

      میں تو ڈر رہا تھا کہ

      اب حسب سابق گالیوں کا سونامہ آوے ای آوے

      کیونکہ

      جن کے پاس دلیل نہیں ہوتی انکا آخری سہارہ گالیاں ہی ہوتی ہیں

      گڈ لگ فار گالیوں والا انقلاب

      :) :)

  18. Ayubi says:

    Good outing for PTI; Imran delivers on his promise of intra party elections, instead of creating another dynasty like PML-N, PPP or ANP.

    Well done IK. It’s not necessarily the end result that matters alone but also the process that you have set in motion.

    The jahil N-leaguers on here, would find it difficult to comprehend.

  19. sheedapistol says:

    Bawa..

    I understand your pane.. and surely you are the big victim..

    PTI supports are young/crazy and offcourse they still need to learn … But keep one thing in your mind that they born in Pakistan’s know what I mean to say….

    Let them support on their own way…. every body have fundamental right to express their feeling (offcourse in their limit).

    I have seen few pictures of IK you posted here….. would it be nice if you could post pictures of that Bakery salesman who was emulated by Shahbaz shareef daughter…

    thanks in advance…

  20. Bawa says:

    شیدا پستول جی

    آپکے کومنٹس کا بہت شکریہ. مجھے کسی سے کوئی پرابلم نہیں ہے اور نہ ہی کسی کی گالیوں سے میرا کچھ بگڑتا ہے. گالیاں بکنے والا خود دوسروں کی نظر میں ذلیل ہوتا ہے اور اپنے کاز کو نقصان پہنچتا ہے

    دوسری پارٹیوں کے ورکرز اور سپورٹرز بھی نوجوان ہیں اور وہ بھی پاکستان میں ہی پیدا ہوئے ہیں لیکن ایسی اوچھی اور گھٹیا حرکتیں کوئی نہیں کرتا ہے. اکا دکا لوگ تو ہر پارٹی میں ہوتے ہیں لیکن کسی پارٹی کے ورکروں کے بارے میں مجموعی تاثر ایسا ہرگز نہیں ہوتا ہے

    آپکی بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ اپنے جذبات کے اظہار کی ہر کسی کو آزادی ہونی چاہئیے لیکن دنیا میں کہیں بھی کسی کو بے لگام آزادی حاصل نہیں ہوتی ہے. ہر آزادی کچھ نہ کچھ زمہ داریوں جکڑی ہوتی ہے اور اس کی کوئی نہ کوئی حد ہوتی ہے. یہ حد وہاں ختم ہو جاتی ہے جہاں سے دوسرے کی ناک شروع ہوتی ہے

    سیاست برداشت اور رواداری کا نام ہے. جس پارٹی کی لیڈرشپ ہی برداشت اور رواداری سے عاری ہو اس کے کارکنوں سے کیا توقع کی جا سکتی ہے؟ نہ تو پی ٹی آئی کی لیڈرشپ کی کوئی سیاسی تربیت ہوئی ہے اور نہ ہی کارکنوں کی اور یہ چیز انکے روئیے سے عیاں ہے

    ایک بار پھر آپکے کومنٹس کا بہت شکریہ

  21. AB says:

    @ BAWA
    AOA

    I have been a silent observer of this forum. I have tried to register myself on discussion forum but was not allowed. All respect to admin for exercising his authority and i do not complain. The reason to register was simple as i could not take any more negative propaganda and that too fabricated in photoshop studio.

    I have serious concerns about post election consition of our country specially once tsunami bubble dilutes or these inqilaabis do not get desired election results. Majority of youth is already ruined and the rest is under process through social media. Being an inqilaabi is a fashion statement these days and most of them do not even know the total constituencies of NA let alone constituency level politics. I wander with this approach we may lead towards tsunami cum civil disobedience or civil war (God Forbade). What is your take on this ?

    • Bawa says:

      بھائی جی و علیکم السلام اور خوش آمدید

      آپکی بات سے اتفاق کرتا ہوں کہ اس وقت نوجوان طبقے نے عمران خان سے بہت زیادہ امیدیں وابستہ کر لی ہیں لیکن جب انتخابات کے نتائج سامنے آئیں گے تو انکی پہلے سے موجود فریسٹیشن مزید بڑھ جائے گی جو انتہائی خطرناک ہو سکتی ہے

      ان نوجوانوں کا زمینی حقائق اور ملکی صورتحال سے واقف نہ ہونا کوئی عجیب بات نہیں ہے لیکن افسوس ان لوگوں پر ہے جو محض اقتدار کے حصول کے لیے ان نوجوانوں سے اصل صورتحال چھپا کر انہیں تیس سے نوے دنوں میں دودھ اور شہد کی نہریں بہانے کے سہانے خواب دکھلا رہے ہیں

      ان نوجوانوں کو کوئی بتانے کو تیار نہیں ہے کہ اس ملک کا بال بال قرضے میں جھکڑا ہوا ہے اور قرضوں کا سود دینے کے لیے بھی قرضے لینے پڑ رہے ہیں. اسکے علاوہ ملک کا ہمیشہ اصل اقتدار فوج کے ہاتھوں میں ہوتا ہے بے شک حکومت جمہوری ہی کیوں نہ ہو. انتخابات اور جمہوری حکومتیں محض عوام کو دکھانے کا ایک ڈرامہ ہوتی ہیں. کوئی جمہوری حکومت، بے شک اسے عوام کی جتنی مرضی حمایت حاصل ہو، عالمی اسٹبلشمنٹ اور ملکی اسٹبلشمنٹ یا فوج کی منشاء کے بغیر ایک قدم بھی نہیں اٹھا سکتی ہے. جو حکومت اپنا ایجنڈا نافذ کرنے کی کوشش کرتی ہے اسے عالمی مالیاتی اداروں، عدلیہ، میڈیا، سیاسی ایجنٹوں اور مذہبی جماعتوں کی مدد سے “راہ راست” پر لانے میں ذرا کوتاہی نہیں کی جاتی ہے

      یہ نوجوان نہیں جانتے ہیں کہ پاکستان وہ بدقسمت ملک ہے جہاں فوج ہمیشہ برسر اقتدار ہوتی ہے بے شک سیاسی حکومت کسی کی بھی ہو. ملکی دفاع، داخلہ اور خارجہ امور کے سارے فیصلے فوج ہی بلا شرکت غیر کرتی ہے. فوج براہ راست سیاست میں نہ بھی ہو تو بھی سیاسی نظام وہی چلاتی ہے. سیاسی حکومت تو بے چاری چار دن گزارنے کے لیے ان فیصلوں کی صرف ذمہ داری لیتی ہے

      پکڑے جاتے ہیں فرشتوں کے لکھے پر ناحق
      آدمی کوئی ہمارا دَمِ تحریر بھی تھا

      فوج کو سیاسی حکومتوں سے معاملے طے کرنے کے لیے بعض اوقات لئے سیاسی چہرے کی ضرورت ہوتی ہے. کل فوج کو بھٹو کو سبق سکھانے کے لیے ایک اصغر خان کی ضرورت تھی اور آج نواز شریف کو سبق سکھانے کے لیے عمران خان کی ضرورت ہے. جب فوج کو “سیاسی چہرے” کی ضرورت ہوتی ہے تو اصغر خان اور عمران خان کو وزیر اعظم بنانے کے خواب دکھائے جاتے ہیں اور جب فوج کا مطلب نکل جاتا ہے تو اسے کئی محمد خان جونیجو اور شوکت عزیز مل جاتے ہیں. اور اصغر خان اور عمران خان کی حالت ایسی ہوتی ہے کہ

      پھرتے ہیں میر خوار کوئی پوچھتا نہیں
      اس عاشقی میں عزت سادات بھی گئی

      پرانا ڈرامہ کبھی پرانا نہیں ہوتا. تاریخ اپنے آپ کو دہراتی ہے لیکن انسان کبھی تاریخ سے سبق سیکھنے کی کوشش نہیں کرتا. شاید اس لیے کہ آنکھوں پر ہارون رشیدوں اور حسن نثاروں نے اقتدار کی پٹی چڑھائی ہوتی ہے جو دیکھنے کے علاوہ سوچنے سمجھنے کی صلاحیت بھی ختم کر دیتی ہے. کہتے ہیں کہ اسوقت بھی حالات میں یہی اہم تبدیلیاں رونما ہونے جا رہی تھیں جس کا تعلق امریکی مفادات اور امریکہ کی خطے میں خواری سے لے کر پاکستان اور اسلامی دنیا کے مفادات تک تھا. اسوقت بھی اصغر خان کو وزیر اعظم بننے کا خواب دکھلا کر ایران بھیجا گیا تھا لیکن اسے اقتدار نہیں دیا گیا تھا. صرف ٹشو پیپر کی طرح استعمال کیا گیا تھا. اصغر خان کا سارا زور خطابت بھٹو کے خلاف تھا لیکن فوج کے بارے میں ایک لفظ نہیں بولتے تھے. آج عمران خان کی بھی یہی پوزیشن ہے. فوج ڈرون حملے کروائے، فوج اپنے لوگوں کو مروائے، فوج اڈے دے، فوج معلومات دے اور فوج ملکی دفاع میں ناکام رہے لیکن فوج کے خلاف ایک لفظ نہیں منہ سے نکلے گا کیونکہ گیم کے پیچھے اصل ہاتھ تو فوج ہی کا ہے

      اسٹبلشمنٹ سیاسی پارٹیاں بنا تو سکتی ہے اور اسے پرجیکٹ بھی کر سکتی ہے لیکن فوج سے بغاوت کر جانے والی سیاسی پارٹیوں کو ختم نہیں کر سکتی. اگر ایسا ہوتا تو آج تک پی پی پی اور نواز لیگ ختم ہو چکی ہوتی. اسٹبلشمنٹ جس پارٹی کو جتنا دباتی ہے عوام اس پارٹی کو اتنی ہی زیادہ پزیرائی دیتی ہے. آنے والے انتخابات میں اصل مقابلہ انہی دو روایتی پارٹیوں میں ہے. عمران خان چند سیٹیں لے جائے گا لیکن اسکا حکومت سازی میں کوئی رول نہیں ہوگا. انقلاب اور سونامی کے نعرے صرف اسوقت تک ہیں جب تک انتخابات کے نتائج سامنے نہیں آتے ہیں

      انقلاب اور سونامی کی اصل حقیقت سامنے آنے کے بعد ان نوجوانوں کی فریسٹیشن ختم کرنے یا کم کرنے پر ابھی سے توجہ دینے اور پلان تیار کرنے کی ضرورت ہے تاکہ یہ نوجوان فریسٹیٹ ہو کر غلط ہاتھوں میں نہ کھیل جائیں

  22. InsaafIk says:

    @bawa ji,

    Han han, Iqtidaar to Nawaz ke aami ki jahez mein aya tha na.

    Agar koi Nawaz aur Zardar ke ilawwa kisi ko lana chaiye to v establishment kara rahi ahi!

    Himmat hai to batao zara Nawaaz kis ka dalaal ban kar siasat mein aya.

    Jis ki aap dalaali kar rahe ho vo Gen Jillani aur Gen Zia ki najai siasi aulaad hai.

    Imran Khan par jhootay ilzaam dharny ki bajaiz, Asghar Khan case ki sachai pe roshni dalo.

    Sharm tun ko magar phir bhi nahi aati (Ghalib se mazrat ke saath)!

    :)

  23. mhansari says:

    پاکستانی قوم اور سیاستدان

    آج کے پاکستانی سیاستدان جس طرح پاکستانی قوم کو ‘ہوکا’دے کر اپنے اپنے جال میں پھنسانے کی کو شش کر رہے ھیں اسے دیکھ کر ایک بہت پرانے نا ول کی یاد آجاتی ہنے جس کا عنوان تھا
    ” -رضیہ غنڈوں میں گھر گئی”
    اس وقت بے چاری قوم پوری طرح ان نام نہاد لیڈروں کے نرغےمیں گہری ہوئی ہنے – اور ان کے حامی نہائیت جو ش و خروش سے ایک دوسرے کو کامیابی سے ننگا کر رہے ھیں اور سب اصل چہرے نمایاں ھو رہے ھیں اللہ پاکستان کو ان نام نہاد لیڈروں کی ھوس سے اپنی امان میں رکھے – امین

  24. AB says:

    @ Bawa

    Many Thanks for your detailed analysis and reply. I pray “God save our nation from path of destruction”. Regarding this Inqilaabi jamhoora.. leave him alone. When they do not have any words to utter they behave like this.In the end its the leader whose reflection is seen among his supporters. I am sorry to say but cannot resist by saying that this man IK and his supporters have “Mouth Diarrhea” and they cannot control it even if they want to (As shown above). Instead of Ghalib .. i say Doctors se maazrat ke saath.

    • Bawa says:

      بہت شکریہ بھائی جی

      الله تعالیٰ اس ملک اور قوم کی حفاظت کرنے والا ہے. ہر قوم ترقی کی راہ پر گامزن ہونے سے پہلے انہی مشکل مراحل سے گزرتی ہے. آج جو مغربی ممالک ترقی کی معراج پر نظر آ رہے ہیں وہ بھی کبھی ہماری ہی طرح انتشار اور تباہی کا شکار تھے. امید ہے کہ اگر جمہوریت چلتی رہی تو ہم جلد ہی ترقی کے راستے پر گامزن ہو جائیں گے

      جہاں تک عمران خان اور اسکے سپورٹرز کی بات ہے تو جیسا کہ میں نے پہلے لکھا ہے کہ

      یہ نام نہاد انقلابی شاید سمجھتے ہیں کہ سیاست میں شور مچا کر یا دوسروں کو گالیاں دے کر ہی انتخابات میں کامیابی ملتی ہے. دوسری پارٹیوں کے ورکرز اور سپورٹرز بھی اس فورم پر موجود ہیں لیکن ایسی اوچھی اور گھٹیا حرکتیں کوئی نہیں کرتا ہے. گالیاں بکنے والا خود دوسروں کی نظر میں ذلیل ہوتا ہے اور اپنے کاز کو نقصان پہنچتا ہے

      سیاست برداشت اور رواداری کا نام ہے. جس پارٹی کی لیڈرشپ ہی برداشت اور رواداری سے عاری ہو اور خوابوں اور خیالوں میں قلعے تعمیر کر رہی ہو، اس کے کارکنوں سے کیا توقع کی جا سکتی ہے؟ نہ تو پی ٹی آئی کی لیڈرشپ کی کوئی سیاسی تربیت ہوئی ہے اور نہ ہی کارکنوں کی اور یہ چیز انکے روئیے سے عیاں ہے. سب سے بڑھکر انہیں زمینی حقائق اور ملکی مسائل کا ادراک ہی نہیں ہے. انکا نہ کوئی وژن ہے، نہ کوئی نظریہ، نہ کوئی پروگرام اور نہ ہی کوئی منزل – بس گالیوں کے سہارے چلے جا رہے ہیں

      انتخابات کے نتائج آنے تک انہیں انکی گالی گلوچ کے ساتھ برداشت کرنا پڑیگا

      :) :)

  25. Bawa says:

    بہت عرصۂ پہلے میں نے ایک فلم میں ایک ڈائیلاگ سنا تھا کہ

    اگر قانون بنانے والوں کو اپنے قانون پر اتنا اعتماد ہوتا تو وہ ایک کے اوپر دوسری، دوسری کے اوپر تیسری اور تیسری کے اوپر چوتھی عدالت نہ بناتے

    آج مجھے عمران خان کے چار حلقوں سے انتخاب لڑنے کا پڑھکر وہی ڈائیلاگ یاد آ گیا ہے

    اگر عمران خان کو اپنی مقبولیت کا ذرا سا بھی یقین ہوتا تو وہ پہلی بار سات، دوسری بار پانچ اور اب چار حلقوں سے انتخاب نہ لڑتا

    کوئی اس حقیقت کو مانے یا نہ مانے کہ

    عمران خان کے چار حلقوں سے انتخاب لڑنے کے اعلان نے نہ صرف اسکی کھوکھلی مقبولیت کا بھانڈا پھوڑ دیا ہے بلکہ یہ اعلان پچھلے دو انتخابات کی طرح ضمانت ضبط کروا دینے والی عبرتناک شکست سے بچنے کی ایک بھونڈی اور ناکام کوشش ہے

    .
    .

    [img]http://e.jang.com.pk/03-28-2013/pindi/images/619.gif[/img]

  26. mhansari says:

    جو چاہیے سو اپ کا حسن کر شمہ ساز کرے

    .سیاہ کو سفید اور سفید کو سیاہ بنانے والے یہ نام نہاد معتبر صحافی ابن الوقتی، ڈھٹای عیاری ، کاسہ لیسی اور مکاری کے ایسے ایسے جال بنتے ھیں کہ شیطان بھی ان کا مرید ھو جاۓ- اقتدار کے ہر چرھتے سورج کے حضور ایسی ایسی نکتہ آفرینی کی جاتی ہنے کہ
    صاحب اقتدار خود کو اللہ کا نائب اور ان جسے مراثیوں کو جوہر شنَاس سمجھنے پر مجبور ھو جاۓ- ملاحظہ فرمائیں اسی کالم کی ابتدا میں مشرف کو “کبھی جنرل ایک مقبول آدمی تھا” کھہ کر اپنے اس کردار کو چھپانے کی کو شش کی جو انہوں نے مشرف کے ا نے پر ادا کیا تھا، ذرا وقت گزرا اور دربار مشرف میں وہ پزیرای نہ ملی تو عمران خان کی کاسہ لیسی فرماتے رہے. اب شائد ان کی پوزیشن میں کچھ کمزوری نمایاں ہوئی تو موجودہ وقت کی بڑ ی طاقت کے حضور قصیده پِش کر دیا گیا، کہ امید پہ دنیا قائم ہنے اور جنرل کیانی کے پاس ابھی اقتدار کے کچھ ماہ باقی بھی ھیں

    نجم سیٹھی کا فوری حوالہ بھی دے دیا گیا- ہارون رشید شائد جلدی میں اپنے ان ساتھیوں کا حوالہ دینا بھول گنے جو امریکہ میں موجودہ اور سابقہ سفیروں کی شکل میں اپنی انہی قلمی کاسہ لیسیوں کی بدولت نوازے گئے
    صحافت کے معزز پیشے سے مولانا ظفر علی خان، حسرت موہانی، اور شورش کاشمیری کو جو احترام حاصل تھا اگر وہ لوگ آج حیات ہوتے اور اس پیشے کی یہ بے توقیری دیکھتے تو شاید اس بے ضمیری اور قلم فروشی پر خود کشی کر لیتے

Leave a Reply