مردم و خانہ شماری کیلئے تمام انتظامی و سکیورٹی انتظامات مکمل

بدھ سے شروع ہونے والی چھٹی مردم اور خانہ شماری کیلئے تمام انتظامی اور سیکورٹی انتظامات مکمل ہیں۔
یہ بات اطلاعات کی وزیر مملکت مریم اورنگزیب نے فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور اور مردم شماری کے چیف کمشنر آصف باجوہ کے ساتھ اتوار کے روز اسلام آباد میں ایک مشترکہ نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
مریم اورنگزیب نے کہا کہ مردم شماری دو مراحل میں کی جائے گی اور اس سال پچیس مئی کو مکمل ہوگی۔
پہلا مرحلہ بدھ کو شروع ہوگا اور آئندہ ماہ کی پندرہ تاریخ کو مکمل ہوگا۔
دس دن کے وقفے کے بعد دوسرا مرحلہ پچیس اپریل کو شروع ہوگا اور پچیس مئی کو مکمل ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ اس مقصد کیلئے اٹھارہ ارب پچاس کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ مردم شماری میں ایک لاکھ اٹھارہ ہزار سے زائد کارکن حصہ لیں گے اور پاک فوج کے اہلکار ان کی معاونت کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ مردم شماری میں خصوصی افراد اور خواجہ سرائوں کو بھی شمار کیا جائے گا۔
مریم اونگزیب نے کہا کہ پچیس مئی کے بعد خواتین اور مردوں کی عبوری فہرستیں شائع کی جائیں گی۔
فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے کہا کہ پاک فوج کے دو لاکھ اہلکار مردم شماری میں مدد کریں گے۔
انہوں نے کہا کہ پاک فوج مردم شماری کے دوران جامع سیکورٹی فراہم کرے گی۔
انہوں نے کہا کہ فوج کے اہلکار اعدادوشمار کی تصدیق کیلئے براہ راست نادرا کے ساتھ رابطے میں ہوں گے۔
وزیر مملکت نے کہا کہ مردم شماری سے مناسب مقامات کیلئے موزوں فنڈز اور دیگر وسائل مختص کرنے میں مدد ملے گی۔
انہوں نے کہا کہ عوام مردم شماری کی اہمیت اور طریقہ کار سے آگاہ کرنے کیلئے جامع آگہی مہم شروع کی گئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ آبادی کے تناسب میں تبدیلی سے متعلق اعدادوشمار کی گنتی کے دوران جغرافک انفارمیشن سسٹم ٹیکنالوجی استعمال کی جائے گی۔
مریم اورنگزیب نے کہا کہ غلط معلومات فراہمی کرنے والے کو چھ ماہ جیل اور پچاس ہزار روپے جرمانہ ہوگا۔
ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ مردم شماری کے بارے میں معلومات کی فراہمی کیلئے ایک ہیلپ لائن0800-57574 قائم کی گئی ہے۔

Leave a Comment